Voice of Asia News

روس پرفروری 2018ء میں منعقدہونے والے سرمائی اولمپکس میں شرکت پرپابندی عائد

لوزان+ سوئٹزرلینڈ(وائس آف ایشیا)روس پرفروری 2018ء میںمنعقدہونے والے سرمائی اولمپکس میںشرکت پرپابندی عائدکردی گئی۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق روس پر 2018ء میںجنوبی کوریاء کے شہرپیانگ چینگ میں منعقدہونے والے سرمائی اولمپکس میںشرکت پرپابندی عائدکردی گئی ہے۔یہ فیصلہ آئی اوسی (بین الاقوامی اولمپک کمیٹی )کی جانب سے ’’بے مثل منظم ہیراپھیری‘‘کے شواہدجو اسے ’’اینٹی ڈوپنگ سسٹم ‘‘ کے ذریعے دستیاب ہوئے ہیں جس کے باعث ابتک روس ہی کے کئی ایتھلیٹ گزشتہ کئی ماہ میںمعطل ہوچکے ہیںکے بعد کیا گیا۔بین الاقوامی اولمپک کمیٹی نے 2016ء کے گرمائی اولمپکس سے قبل روس پرمکمل پابندی عائد نہیںکی تھی مگرشمڈکمیشن کی جانب سے حاصل کئے گئے شواہدنے ممنوعہ ادویات کے استعمال کی صورتحال کومکمل طورپرغیرمتنازعہ بنادیاہے جس کے باعث آئی اوسی نے روس کواگلے سال 9 تا 25فروری ،پیانگ چینگ جنوبی کوریاء ہونے والے سرمائی اولمپکس سے معطل کردیاہے۔اس سے قبل روس اپنے ہاںسوچی میںمنعقدہونے والے 2014ء کے سرمائی اولمپک میںتمغوںکے ٹیبل پرسرفہرست رہاتھا۔تاہم بے گناہ ایتھلیٹس کوتحفظ دینے کیلئے روس کیلئے دروازہ کھلاچھوڑدیاگیاہے تاکہ وہ روس کے اولمپک اتھلیٹس کے طورپرحصّہ لے سکیںاور ایسا صرف ایسی صورت میں کہ جب وہ سخت ترین حالات کے مطابق یہ ظاہرکریںکہ ان کاپس منظرممنوعہ ادویات کے استعمال سے مکمل طور پر صاف ہے۔آئی اوسی نے روسی اولمپک کمیٹی کے صدرالیکزینڈرژو کووکوبھی آئی او سی ممبرکے طورپرمعطل کرنے کافیصلہ کیاہے جبکہ روسی نائب وزیراعظم ویٹالی مٹکو،جو 2014ء کے سوچی سرمائی اولمپکس کے موقع پروزیرکھیل تھے پربھی مستقبل میں اولمپکس کھیلوںمیںکسی قسم کی شرکت پرپابندی لگادی گئی ہے ۔سوئٹزرلینڈکے سابق صدرسموئیل شمڈ نے ایک نیوزکانفرنس میں بتایاکہ روسی ایتھلیٹس کے ممنوعہ ادویات کے استعمال میںروسی حکومت کے شامل ہونے کے الزامات پرمبنی ان کی رپورٹ اس بات کی تصدیق کرتی ہے کہ سوچی گیمزمیں اینٹی ڈوپنگ قواعد اورسسٹم میںمنظم ہیراپھیری کی گئی۔یہ نتائج محض روس کے سابق اینٹی ڈوپنگ چیف گریگوری روڈچنکوو کی مخبری پرمبنی نہیںتھے بلکہ اس کے ساتھ سائنسی شواہد ،گواہوںکے بیانات کی دستاویزات اورخط وکتابت بھی تھی۔حقائق یہ ہیںکہ روس میںڈوپنگ اوراینٹی ڈوپنگ نظام میں منظم ہیراپھیری تھی جوسوچی 2014ء میںبھی ہوئی۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے