Voice of Asia News

حکومت نے جموں کشمیر کو ایک قبرستان میں تبدیل کردیا ہے۔سید علی گیلانی

سری نگر(وائس آف ایشیا)کل جماعتی حریت کانفرنس گ کے چیرمین سید علی گیلانی نے نے آزادی پسند قائدین، کارکنان اور نوجوانوں کی گرفتاری کو طول دینے اور انہیں مسلسل نظربند رکھنے کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا کہ پی ڈی پی حکومت آزادی پسندوں کو ناگپور کی ہدایات پر گرفتار رکھ کر جموں کشمیر کو ہندو راشٹر سے جوڑنا چاہتی ہے۔ چیرمین حریت کانفرنس نے کہا کہ پی ڈی پی جو بھارتی ایجنسیوں کی تخلیق ہے نے روزِ اول سے ہی منافقانہ رول ادا کرتے ہوئے جموں کشمیر کے عوام کو ظلم وجبر اور بربریت کی بھینٹ چڑانے کے لیے ہر وہ تیر آزمایا جس کا کوئی انسانی دل رکھنے والا شخص گمان بھی نہیں کرسکتا ہے۔ ’’گولی نہیں بولی‘‘ اور ’’خیالات کی جنگ‘‘ کے کھوکھلے نعرے دے کر اس حکومت نے اقتدار میں آتے ہی بات کے بجائے نہ صرف گولہ اور بارود استعمال کیا، بلکہ جموں کشمیر میں نئے نئے ہتھیار درآمد کرائے۔ یہاں نہتے اور معصوم بچوں کی بھینائی چھیننے کے لیے جنگلی جانوروں کے ہتھیار استعمال کئے گئے، جبکہ بہت ساری جگہوں پر کیمیائی ہتھیار بھی استعمال میں لائے گے اس حکومت نے ’’خیالات کی جنگ‘‘ کا کھوکھلہ نعرہ دیکر خیالات کو ہی آہنی زنجیروں کے ساتھ جکڑ کر زینت زندان بنادیا۔ اس حکومت نے غیرقانونی قانون PSAکا سب سے زیادہ استعمال کرکے سیاسی آواز کو ہمیشہ کے لیے جیلوں کے اندر گم کرنے کی مذموم کوششیں جاری رکھیں۔ حریت کانفرنس نے ناگپور کی کٹھ پتلی حکومت کے ظلم وجبر اور جبرو قہر کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا کہ اس حکومت نے جموں کشمیر کو ایک قبرستان میں تبدیل کرنے کے لیے ہر اول دستے کا رول نبھا رہی ہے اور وہ اس کے لیے اپنے ناگپور کے آقاؤں سے داد بھی وصول کرتی ہے اور اپنے ظالم اقتدار کی ویلی ڈیٹی بھی بڑھا رہی ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے