Voice of Asia News

امریکی صدر میں عقل کی کمی ہے، عمران خان

اسلام آباد (وائس آف ایشیا ) امریکی صدر کی پاکستان کو دھمکی آمیز ٹویٹ پر چئیرمین تحریک انصاف عمران خان نے شدید ردِ عمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ڈونلڈ ٹرمپ میں عقل کی کمی ہے۔اسلام آباد میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے عمران خان نے کہا کہ ٹرمپ کو سمجھ ہی نہیں کہ افغان جنگ سے پاکستان میں کتنی تباہی ہوئی اور نہ ہی ان کوماضی کے حقائق کےبارے میں علم ہے۔عمران خان نے مزید کہا کہ ڈونلڈ ٹرمپ کوپاکستان کےدشمنوں نے ایسا بیان دینے پر اکسایا۔ انہوں نے کہا کہ یہ جنگ ہماری نہیں تھی، ملک نے دہشت گردی کے خلاف 70 ہزار قربانیاں دیں جبکہ بھاری معاشی نقصان بھی اٹھایا۔عمران خان نے کہا کہ اتنا سب ہونے کے باوجود امریکا ہمیں ذلیل کر رہا ہے، کسی اور سے پیسے لے کر جنگ لڑیں گے تو ذلت ہوگی۔

ٹرمپ کی دھمکی

 یاد رہے کہ پیر کے روز امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹویٹر پر جاری اپنے بیان میںپاکستان کو آیندہ سے کسی بھی قسم کی امداد نہ دینے کی دھمکی دی اور لکھا کہ گذشتہ پندرہ برسوں میں ہم نے پاکستان کو 33 ارب ڈالرز کی امداد دی جو بے وقوفی تھی۔ اب پاکستان کو کوئی امداد نہیں ملے گی۔امریکی صدر نے الزام عاید کیا کہ ہم پاکستان کو بھاری امداد دیتے رہے لیکن دوسری جانب سے ہمیں جھوٹ اور فریب کے سوا کچھ نہیں دیا گیا۔یہ پہلا موقع نہیں ہے جب صدر ٹرمپ نے پاکستان کو تنقید کا نشانہ بنایا ہے

پاکستان کا سخت ردعمل

پاکستان نے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے اس توہین آمیزبیان کا سخت نوٹس لیا ہے اور اسلام آباد میں متعین امریکی سفیر ڈیوڈ ہیل کو دفتر خارجہ میں طلب کر کے ایک احتجاجی مراسلہ ان کے سپرد کیا ہے۔ اس میں صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے پاکستان مخالف بیان پر امریکا سے وضاحت طلب کی گئی ہے۔ دفتر خارجہ میں امریکی سفیر کو تھمائے گئے احتجاجی مراسلے میں کہا گیا ہے کہ دہشت گردی کے خلاف جنگ کے حوالے سے امریکی صدر کے پاکستان مخالف بیان پر وضاحت پیش کی جائے کیونکہ اس جنگ میں اخراجات کولیشن فنڈز سے کیے جاتے تھے۔سیکریٹری خارجہ تہمینہ جنجوعہ نے امریکی سفیر سے ملاقات میں واضح کیا ہے کہ دہشت گردی کے خلاف جنگ میں سب سے زیادہ نقصان پاکستان کا ہوا ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے