Voice of Asia News

ایرانی قیادت کا ایک دوسرے کی پگڑیاں اچھالنے کا کلچر خطرناک ہے،ایرانی فوج

تہران(وائس آف ایشیا) ایرانی قیادت کی جانب سے ملک میں حالیہ ہفتوں کے دوران جاری رہنے والے پرتشدد عوامی مظاہروں کا الزام ایک دوسرے پر عائد کرنے پر پاسداران انقلاب نے کہاہے کہ ایرانی قیادت کا ایک دوسرے کی پگڑیاں اچھالنے کا کلچر خطرناک ہے،غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق پاسداران انقلاب کے بیرون ملک ایجنٹ اور القدس ملیشیا کے سربراہ جنرل قاسم سلیمانی نے خبردار کیا کہ ایرانی قیادت ایک دوسرے کی بگڑیاں اچھالنے کی پالیسی سے باز آئے، انہوں نے کہا کہ انقلاب کے دستر خوان پر موجود بعض لوگ کھلے عام سپریم لیڈر کو برا بھلا کہنے لگے ہیں اور ملک میں ہونے والے مظاہروں کا الزام ایرانی حکمران قیادت پرعاید کرتے ہیں۔جنرل قاسم سلیمانی نے کہا کہ ایرانی قیادت کو ایک دوسرے پر دشنام طرازی کے بجائے اس مشترکہ بیرونی دشمن کے خلاف متحد ہونا چاہیے جو ایران کو آگے بڑھتا نہیں دیکھ سکتا۔ یہ دشمن کبھی عوام کو حکومت کے خلاف اکساتا ہے اور کبھی عالمی سطح پر ایران کے خلاف سازشیں کرتا ہے،سلیمانی نے اشارہ تا تنقید کرنے والی قیادت سے مطالبہ کیا کہ وہ ولی الفقیہ سے معافی مانگیں تاکہ متکبر اور بدمعاش طاقتوں کو یہ پیغام جائے کہ ایرانی قیادت میں داخلہ اور خارجہ پالیسیوں میں کوئی اختلاف نہیں۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے