Voice of Asia News

شاہ زیب قتل؛ جیل حکام کا شاہ رخ جتوئی کوعدالت میں پیش کرنے سے انکار

کراچی(کرائم رپورٹروائس آف ایشیا جمال احمد) جیل حکام نے شاہ زیب قتل کیس کے مرکزی مجرم شاہ رخ جتوئی کو عدالت میں پیش کرنے سے انکار کردیا۔  جوڈیشل مجسٹریٹ ملیر کی عدالت میں شاہ زیب قتل کیس کے مرکزی مجرم شاہ رخ جتوئی کے خلاف بیرون ملک فرار کیس کی سماعت ہوئی، سماعت کے دوران جیل حکام نے شاہ رخ جتوئی کو عدالت میں پیش کرنے سے انکار کردیا۔ جس پرجوڈیشل مجسٹریٹ ملیر نے جیل حکام پر شدید برہمی کا اظہارکیا اور  جیل حکام کو شاہ رخ جتوئی کو عدالت میں پیش کرنے کا حکم دے دیا۔ جیل حکام نے موقف اختیار کیا کہ مجرم سزا یافتہ ہے سیکیورٹی کے پیش نظر اسے عدالت میں پیش نہیں کیاجاسکتا، جس پر عدالت نے کہا کہ سیکیورٹی فراہم کرنا جیل حکام کی ذمہ داری ہے۔ جیل حکام نے کہا مجرم اس کیس میں ضمانت پر ہے، قتل کیس میں پابندِ سلاسل ہے۔ جب کہ ایف آئی اے حکام کا کہنا ہے کہ 5 سال گزرچکے ہیں ملزمان پر فردِ جرم عائد نہ ہوسکی، شاہ رخ جتوئی کی مسلسل غیر حاضری کے باعث مقدمہ 5 سال سے التوا کا شکار ہے، مقدمے کے التواء ہونے کے باعث 5 ملزمان نے بریت کی درخواست دائرکردی۔واضح رہے کہ  مجرم شاہ رخ جتوئی دسمبر 2012 میں شاہ زیب کو قتل کرنے کے بعد دھوکہ دہی کے ذریعے بیرون ملک فرار ہوگیا تھا، بعد ازاں 2013 میں اسے ایئرپورٹ سے گرفتار کیا گیا تھا۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے