Voice of Asia News

مغربی ممالک ترکی یا دہشت گردوں میں سے کسی ایک کا انتخاب کرنے پر مجبور ہیں، جانکلی

استنبول (وائس آف ایشیا) ترک وزیر دفاع نورالدین جانکلی نے کہا ہے کہ مغربی ممالک ترکی یا دہشت گردوں میں سے کسی ایک کا انتخاب کرنے پر مجبور ہیں۔ ترک نشریاتی ادارے کے مطابق گیریسون یونیورسٹی میں "قومی جدوجہد میں قومی دفاع پینل” خاب کرتے ہوئے انھوں نے کہا کہ مغربی ممالک دہشت گرد تنظیم داعش کو ترپ کے پتّے کے طور پر استعمال کر رہے تھے اور ان کا خیال ہے کہ اس وقت جیسے داعش کو قبل از وقت ختم کرنے کی پشیمانی میں ہیں۔انہوں نے کہا کہ مغربی ممالک نے داعش کو ہتھیار کے طور پر استعمال کیا اور اب یہ تاثر دینے کی کوشش میں ہیں کہ جیسے شام کے علاقے عفرین میں علیحدگی پسند دہشت گرد تنظیم پی کے کے کی شامی شاخ پی وائی/ وائے پی جی کے خلاف ہمارا جاری کردہ آپریشن داعش کے خلاف جدوجہد میں توجہ منتشر کرنے کا اسے ناکام بنانے کا سبب بن رہا ہے۔ جانکلی نے کہا کہ یہ مغربی ممالک یا تو ترکی کے دوست ہو سکتے ہیں یا پھر دہشت گردوں کے ، بیک وقت دونوں کے ساتھ دوستی ممکن نہیں ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے