Voice of Asia News

نیپال میں 71 مسافروں کو لانے والا طیارہ حادثے کا شکار

ڈھاکہ(وائس آف ایشیا)نیپال کے دارالحکومت کٹھمنڈو کے ہوائی اڈے پر بنگلادیش کے 71 مسافروں کو لانے والا مسافربردار طیارہ حادثے کا شکار ہوگیا ہے۔تفصیلات کے مطابق بروزپیر بنگلا دیش سے 71 مسافروں کو نیپال لانے والے یو ایس بنگلہ ایئرلائن کے مسافربردار طیارے کوکٹھمنڈو کے ہوائی اڈے پرلینڈنگ کے دوران حادثہ پیش آیا ہے۔ ایئرپورٹ انتظامیہ کا کہنا ہے کہ حادثے  کے بعد طیارے میں آگ لگ گئی ہے‘ تاہم 17 افراد کو طیارے سے نکال لیا گیا ہے۔ایئرپورٹ کے ترجمان بریندرا پرساد کا کہنا ہے کہ بنگلا دیش کے دارالحکومت ڈھاکہ سے پرواز کرنے والے طیارے میں سوار 71 مسافروں میں سے 17 کو بحفاظت نکال لیا گیا ہے، باقی مسافروں کے بارےمیں ابھی کچھ نہیں کہا جاسکتا کہ کس وہ حالت میں ہیں۔ ان کا مزید کہنا ہے کہ’ہم آگ پرقابو پانے کی کوشش کررہے ہیں‘۔مقامی ذرائع کا کہنا ہے کہ طیارہ حادثے میں کم از کم پچاس مسافروں کی ہلاکت کا اندیشہ ہے‘ جہاز سے زخمی حالت میں بچائے جانے والے مسافروں کو اسپتال منتقل کیا گیا ہے‘ زندہ بچ جانے والوں میں بیشتر کی حالت نازک ہے۔خیال رہے کہ مختلف اطراف سے بلند و بالا پہاڑوں سے گھرا نیپال کا یہ ایئرپورٹ دنیا کا خطرناک ترین ہوائی اڈا تصور کیا جاتا ہے، اکثر اوقات چھوٹے جہازوں کو ایئر پورٹ کی ذیلی ہوائی پٹی پر لینڈ کرنے میں مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔سنہ 1992 میں تھائی ایئرلائن  کی ایک پرواز بھی کٹھمنڈو ہوائی اڈے پر لینڈنگ کے دوران حادثے کا شکار ہوئی تھی‘ اس حادثے کے نتیجے میں طیارے میں سوار تمام مسافرہلاک ہوگئے تھے۔یو ایس بنگلہ ایئر لائن‘ یو ایس بنگلہ گروپ کا حصہ ہے جو کہ بنگلادیش اورامریکا کی مشترکہ تجارتی کمپنی ہے۔ یہ ایئر لائن بمبارڈیئر اور بوئنگ طیارے استعمال کرتی ہے

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے