Voice of Asia News

بھارتی فاسٹ بولر محمد شامی کے خلاف کارروائی تیزموبائل فون قبضے میں

کولکتہ (وائس آف ایشیا) کولکتہ پولیس نے بھارتی فاسٹ بولر محمد شامی کے خلاف کارروائی تیز کرتے ہوئے ان کا موبائل فون قبضے میں لے لیا۔تفصیلات کے مطابق یہ وہی موبائل ہے جس کے بارے میں کرکٹر کی اہلیہ حسین جہاں نے دعویٰ کیاکہ وہ اس سے غیرعورتوں سے رابطہ کرتے تھے، انھیں یہ موبائل شامی کی بی ایم ڈبلیو گاڑی سے ملا تھا، جس کی وجہ سے ان میں لڑائی شروع ہوئی۔پولیس ذرائع کا کہنا ہے کہ اس موبائل کو فورنسک ٹیسٹ کیلیے بھیجا جائے گا،اس میں استعمال ہونے والے نیٹ ورک اور مختلف ایپس کا بھی جائزہ لے کر یہ جاننے کی کوشش ہوگی کہ شامی کے کس کس سے رابطے تھے۔ دوسری جانب محمد شامی کی اہلیہ حسین جہاں ایک رپورٹر سے الجھ پڑیں جس نے ان پر کیمرہ توڑنے کا الزام عائد کردیا۔ اپنے خاوند پر الزامات کی بھرمار کرنے والی حسین جہاں کی ایک ویڈیو سامنے آئی جس میں کچھ رپورٹرز اور کیمرہ مینز کو ان کے پیچھے جاتا ہوا دکھایا گیا ہے، جس پر وہ بعد میں غصے میں آجاتی ہیں اور گاڑی میں بیٹھتے ہوئے ان کی ایک رپورٹر کے ساتھ بحث بھی ہوتی ہے، مگر یہ واضح نہیں ہوسکا کہ انھوں نے مذکورہ رپورٹر کو دھکا وغیرہ دیا،رپورٹر نے دعویٰ کیاکہ حسین جہاں نے ان کا کیمرہ بھی توڑدیا ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے