Voice of Asia News

پیپلز پارٹی نے پہلی مرتبہ خاتون سینیٹرز کو قائد حزب اختلاف نامزد کردیا

اسلام آباد (وائس آف ایشیا) پیپلزپارٹی نے ایک اور تاریخ رقم کردی اور سینیٹ کی تاریخ میں پہلی مرتبہ خاتون سینیٹرز کو قائد حزب اختلاف نامزد کردیا۔تفصیلات کے مطابق چیئرمین اور ڈپٹی چیئرمین سینیٹ کے انتخاب کے بعد سیاسی پارٹیاں سینیٹ میں اپنا قائد حزب اختلاف کیلئے لانے میں ہیں۔پاکستان پیپلزپارٹی نے سینیٹر شیری رحمان کو سینیٹ میں قائد حزب اختلاف نامزد کردیا، جس کی منظوری پاکستان پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے دیدی۔پاکستان پیپلزپارٹی نے شیری رحمان کو سینیٹ میں قائد حزب اختلاف کیلئے نامزد کرکے سینیٹ میں ایک اور نئی تاریخ رقم کردی، اس سے پہلے کبھی بھی سینیٹ میں خاتون سینیٹر حزب اختلاف کے عہدے پر نہیں رہی ہے۔پاکستان پیپلزپارٹی کو یہ بھی اعزاز حاصل ہے کہ انھوں نے بطور وزیر اعظم کیلئے محترمہ بے نظیر بھٹو اور قومی اسمبلی کے اسپیکر کیلئے فہمیدہ مرزا اور ڈپٹی اسپیکر کیلئے اشرف عباسی کو نامزد کیا تھا ۔پیپلزپارٹی نے اپنی یہ روایت برقرار رکھتے ہوئے شیری رحمان کو نئی ذمہ داری دی ہے، نامزد اپوزیشن لیڈر شیری رحمان امریکا میں پاکستان کی سفیر بھی رہ چکی ہیں۔خیال رہے کہ چیئرمین اور ڈپٹی سینیٹ انتخابات میں حکومتی اتحاد کو شکست سامنا کرنا پڑا اور چیئرمین کی نشست پر اپوزیشن کے مشترکہ امیدوار صادق سنجرانی کامیاب قرار پائے جبکہ ان کے مقابلے میں راجا ظفر الحق 46 ووٹ لے سکے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے