Voice of Asia News

اوکیناوا میں دوسری جنگ عظیم کے دوران اجتماعی خودکشی کے مقام پر یادگاری تقریب

ٹوکیو (وائس آف ایشیا) جاپان میں دوسری جنگِ عظیم کے دوران اجتماعی خودکشی کے مقام پر ایک یادگاری تقریب منعقد کی گئی۔ جاپان کے نشریاتی ادارے کے مطابق نابالغ لڑکوں کے ایک گروپ کی جانب سے اوکیناوا کے مقام کو نقصان پہنچانے کے بعد یادگاری تقریب پہلی بار وہاں منعقد کی گئی ہے۔ 2 اپریل 1945ء کو امریکی فوج کے ہاتھوں قتل یا گرفتار کئے جانے کے خوف سے یومیتان گاؤں کے چِیبی چِری گاما غار میں83 افراد نے خٴْود کشی کرلی تھی۔اوکیناوا کی پولیس نے خودکشی کرنے والوں کی باقی ماندہ اشیاء کی توڑ پھوڑ کے الزام میں چار مقامی نابالغ لڑکوں کو گزشتہ ستمبر میں گرفتار کیا تھا۔ بعد ازاں سزا کو معطل کرتے ہوئے انہیں پروبیشن پر رہا کردیا گیا تھا۔ مذکورہ مقام پر ہونے والی ایک یادگاری تقریب میں مرنے والوں کے اہل خانہ سمیت تقریباً 30 افراد نے شرکت کی۔ تقریب میں شریک افراد نے اگربتیاں جلائیں اور دعا کی۔ لواحقین کے سربراہ، نوری او یوہانا نے لڑکوں کی طرف سے لکھا گیا ایک خط باآواز بلند پڑھا۔لڑکوں نے غار کی تاریخی اہمیت کا علم نہ ہونے کے باعث نقصان پہنچانے پر معذرت اور اپنے افعال کا مداوا کرنے کی خواہش کا اظہار کیا ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے