Voice of Asia News

سبزیوں میں سب سے سستا اور مفید سبز سونا یعنی پالک

لاہور(وائس آف ایشیا)قدرت نے ہمیں دو نہایت قیمتی سنہرے پھل خوب عطا کئے ہیں ایک کینو دوسرا آم ، اسی طرح سبزیوں میں سب سے سستا اور مفید سبز سونا یعنی پالک بھی سال بھر خوب فراہم ہوتا ہے۔ پالک کو غیر معمولی طاقت کا راز بتایا جاتا ہے کیا بچے اور کیا بوڑھے سب کیلئے یہ کافی مفید ہے لیکن اس کی توانائی بخش خاصیت کے باوجود اسے بہت کم استعمال کرتے ہیں پالک شوق سے کھایا جاتا ہے تو خواتین اور نو عمروں کے چہرے زرد نہ رہتے۔ خون افزائی کی صلاحیت کی وجہ سے پالک فولاد اور حیاتین کے مہنگے شربتوں سے زیادہ مفید اور کارگر ہوتا ہے ہاں اس کیلئے یہ بھی ضروری ہے کہ اسے بہت زیادہ بھونا نہ جائے کیونکہ اس طرح کی تاثیر بھن کر بہت کم ہو جاتی ہے یہ خیال بھی درست نہیں ہے کہ پالک میں ڈھیروں فولاد ہوتا ہے۔ پالک کی خوبی در اصل یہ ہے کہ اس میں فولاد کے علاوہ بھی دوسری بہت اہم خاصیتیں اور غذائی جوہر ہوتے ہیں یہ کہنا غلط ہوگا کہ غذائی اجزاء کے اعتبار سے کوئی اور سبزی اس کامقابلہ نہیں کر سکتی ہیں۔ اپنے بیرونی گہرے رنگ کے علاوہ پالک کے نرم و نازک پتوں میں بڑے اہم مائع تکید اجز
اء مثلاً حیاتین الف(وٹامن اے)، حیاتین ج(وٹامن سی) حیاتین ھ(وٹامن ای) حیاتین ک(وٹامن کے) حیاتین ب اور ب-۶وٹامن (وٹامن بی اور وٹامن بی -۶) کے علاوہ پوٹا شیم، کیلشیم جست بھی ہوتا ہے فولک ایسیڈ سے فائدہ حاسل کرنے کیلئے بہتر یہ ہے کہ پالک کوابالنے کے بجائے بھاپ پر گلا کر رکھاجائے۔ پالک کو چار منٹ تک ابالنے اور بھوننے سے اس میں موجود ولیٹ کی مقدار آدھی ہو جاتی ہے۔
تحقیق یہ ثابت کرتی ہے کہ اپنے دیگر صحت بخش اجزاء کے علاوہ پالک میں کوئی درجن بھر نباتی غذئیت بخش اجزاء بھی ہوتے ہیں ۔ صحت و توانائی کی تعمیر کے سلسلہ میں اجزاء خاس مقام رکھتے ہیں مثلاً ان کی ایک بہت اہم خاصیت یہ ہے کہ یہ اجزاء سرطان کا مقابلہ کرتے ہیں۔ امراض قلب کا اہم سبب ہومو سسٹین کی مضرتوں کو اعتدال پر رکھنا ہے پالک کے استعمال سے خواتین میں چھاتی کے سرطان کے خطرہ سے محفوظ رہ سکتی ہیں اسی طرح الک میں موجود کیروٹینائڈز سے پروسٹیٹ یا مثانے کے غدود کے سرطان کا خطرہ بھی کم کیا جا سکتا ہے۔ پالک کا کیروٹینائزڈ کا یہ جوہر نیو گزین تھین کہلاتا ہے۔ اگر آپ گٹھیا کے مریض ہیں تو آپ یہ جان کر یقینا خوش ہوںگھے کہ پالک میں موجود ورم دور کرنے کی خاصیت اس کے استعمال سے آپ کو ورم ار رد سے نجات دلاسکتی ہے۔ پالک میں موجود مانع تکید اجزاء جسم میں فری ریڈیکلز جیسے مضر اجزاء کو قابو میں کر کے آپ کو قلب اور شریانوں کی تکلیف سے بھی محفوظ رکھ سکتی ہیں۔ پردہ چشم میں بگاڑ کی وجہ سے نظر گر رہ ہو تو اس کا علاج بھی پالک سے بخوبی کیا جا سکتا ہے۔
پالک بینائی کا محافظ ہوتا ہے گرتی یا کمزور ہوتی نظر کو سنبھالنے کے علاوہ پالک موتیا بند سے بھی آپک کو محفوظ رکھتا ہے پالک کی ان خوبیوں سے بھر پور استفادہ کیلئے تازہ پالک کو صرف پانی سے اچھی طرح دھونے کے بعد اس کے پتے کچے کھانے چاہئیں۔ یہ سلاد کی طرح بھی کھایا جا سکتا ہے اس کے ساتھ آپ دوسری سبزیاں جیسے ٹماٹر، پیاز، گاجر، کھیرا وغیرہ بھی شامل کر سکتے ہیں۔ پالکد میں پالک کے ہرے بھرے پتوں کو چھیلا کر ان پر دوسری رنگ برنگی سبزیاں سجائیے اور انہیں خوب چبا کر کھائیے اور صحت و توانائی اور امراض سے تحفظ کا سامان کیجئے۔ پالک پکانا ہی ہے تو اسے بس معمولی حرارت پر تھوڑی دیر الٹ پلٹ کر ذرا سا نرم کیجئے اور رغبت اور شوق سے نوش کریئے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے