Voice of Asia News

و زن گھٹانے اورگلوکوز کے بہترکنٹرول کیلئے پیٹ بھرکر ناشتہ ضروری، امریکی ماہرین

لاہور(وائس آف ایشیا)امریکی ماہرین صحت نے کہا ہے کہ صبح کے وقت متوازن اور صحت بخش ناشتہ پیٹ بھر کر کرنے سے موٹاپا اور ذیابیطس، دونوں ایک ساتھ قابو میں آتے ہیں۔امریکا میں کی جانے والی تحقیق کے نتائج گزشتہ روز شکاگو میں اینڈوکرائن سوسائٹی کے سالانہ اجلاس میں پیش کی گئی جس میں سائنسدانوں نے اوسطاً 69 سال عمر کے 29 افراد کا مطالعے کیا۔مطالعے میں 11 خواتین اور 18 مرد شامل تھے۔ یہ تمام افراد ٹائپ 2 ذیابیطس کے علاوہ موٹاپے میں بھی مبتلا تھے۔تین ماہ تک جاری رہنے والے اس مطالعے میں دیکھا گیا کہ وہ افراد جنہوں نے متوازن غذا پر مشتمل، توانائی سے بھرپور ناشتہ پیٹ بھر کر کیا، ان کے خون میں شکر کی مقدار (بلڈ شوگر) نہ صرف بہتر طور پر کنٹرول میں رہی بلکہ ان کے وزن میں بھی کمی واقع ہوئی۔ماہرین کے مطابق اگر صبح کے وقت صحت بخش ناشتہ پیٹ بھر کر کیا جائے تو اس کے اثرات دن کے کسی بھی دوسرے حصے میں کھائے جانے والے کھانے کے مقابلے میں کہیں زیادہ بہتر اور صحت افزاء ہوتے ہیں۔ تحقیق سے دلچسپ بات یہ بھی سامنے آئی کہ روزانہ 6 مرتبہ مساوی مقدار میں کھانا کھانے والے افراد کو وقت بے وقت بھوک کا احساس تنگ کرتا رہا جبکہ دن میں تین مرتبہ (تگڑا ناشتہ، درمیانہ دوپہر کا کھانا، ہلکا پھلکا رات کا کھانا) کھانے والے افراد نے بے وقت بھوک کی شکایت بہت ہی کم کی۔مزید یہ کہ پہلے گروپ کے مقابلے میں انہیں شوگر کنٹرول کے لیے بھی کم انسولین کی ضرورت پڑی۔ماہرین کا کہنا ہے کہ ذیابیطس میں مبتلا افراد کی تقریباً 90 فیصد تعداد موٹاپے کا شکار بھی ہوتی ہے جبکہ موٹاپا کم کرکے ذیابیطس پر بھی بہتر کنٹرول حاصل کیا جاسکتا ہے۔

image_pdfimage_print
شیئرکریں
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے