Voice of Asia News

منہ کا السر (زخم، پکنا، دانے بن جانا) نہایت تکلیف دہ مسئلہ ہے

لاہور (وائس آف ایشیا)منہ کا السر (زخم، پکنا، دانے بن جانا) نہایت تکلیف دہ مسئلہ ہے، جو کھانے اور بولنے کی صلاحیت کو بھی متاثر کرتا ہے۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ بعض اوقات یہ السر کینسر تک بھی پہنچا دیتا ہے، لہذا اس سے بچاؤ یا شکار ہونے کی صورت میں فوری علاج ناگزیر ہے۔ تو یہاں ہم آپ کو منہ کے السر کے علاج کے لئے چند قیمتی گھریلو ٹوٹکوں کے بارے میں بتاتے ہیں۔
تلسی: تلسی کے پتوں میں حیران کن ادویاتی صلاحیت ہوتی ہے۔روزانہ تین سے چار بار تلسی کے پتوں کو پانی کے ساتھ چبانے سے نہ صرف آپ منہ کے السر سے محفوظ رہیں گے بلکہ جو لوگ اس مصیبت کا شکار ہیں، وہ تیزی سے صحت یاب بھی ہو جائیں گے۔
شہد: شہد ایک قدرتی مرطب یعنی نمی برقرار رکھنے کی صلاحیت رکھتا ہ
ے۔ شہد اینٹی مائیکروبائیل تاثیر کے باعث منہ کے السر کا تیزی سے علاج کرتا ہے۔ منہ کے السر کے علاج کے لئے آپ شہد کو براہ راست بھی منہ میں رکھ سکتے ہیں یا پھر اس میں تھوڑی ہلدی ملا کر اسے متاثر جگہ پر لگانے سے زخم جلد بھر جائے گا۔
خشخاش: خشخاش ٹھنڈی تاثیر کی حامل غذا ہے اور ماہرین کے مطابق انسانی جسم کے درجہ حرارت میں اضافے کا ایک نتیجہ منہ میں السر کی صورت میں بھی برآمد ہوتا ہے، لہذا پکے ہوئے منہ کے علاج کے لئے خشخاش کا بطور خاص استعمال کیا جائے۔
ناریل: خشک ناریل، پانی سے بھرا اور اس کا تیل تینوں ناریل کے درخت کی پیداوار ہیں، جن کے استعمال میں منہ کے السر کا بہترین علاج مضمر ہے۔ جسم کے درجہ حرارت میں کمی کے لئے ناریل کا پانی پیئں، متاثرہ جگہ پر براہ راست ناریل کا تیل لگائیں اور منہ میں زخموں کی وجہ سے ہونے والے درد میں آرام کے لئے خشک ناریل کھائیں۔
ملیٹھی: ملیٹھی متعدد ادویاتی صلاحیتوں کی حامل ہے۔ لیٹھیمیں پائی جانے والی اینٹی انفلیمنٹری صلاحیت السر کے باعث منہ کے درد کا بہترین علاج ہے۔ ملٹھی کے پاؤڈر میں گلسرین اور شہد ملا کر زخموں یا دانوں پر لگانے سے آپ کوفوری آرام ملے گا۔ اس کے علاوہ لیٹھیکے پاؤڈر اور ہلدی کو گرم دودھ میں ملا کر پینے سے بھی منہ کا السر جاتا رہتا ہے۔

image_pdfimage_print
شیئرکریں
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے