Voice of Asia News

بل گیٹس کی طرف سے الزھائمر کے علاج کے لیے کروڑوں ڈالر کی گرانٹ

دبئی(وائس آف ایشیا) دٴْنیا کے امیر ترین شخص اور امریکی ارب پتی بل گیٹس اور کاسمیٹک مصنوعات تیار کرنے والی ایسٹی لوڈر کمپنی کے اعزازی چیئرمین لیونارڈ لوڈر نے مشترکہ طور پر خطرناک دماغی بیماری الزہائمر کے علاج اور بیماری کی قبل از وقت تشخیص کے لیے اگلے تین سال کے دوران 30 ملین ڈالر کی رقم مختص کرنے کا اعلان کیا ہے۔میڈیارپورٹس کے مطابق مائیکرو سافٹ کے بانی بل گیٹس کی جانب سے ذاتی طورپر پچھلے سال نومبر میں خرف(جان لیوا دماغی مرض) کے علاقے کے لیے ایک فنڈ قائم کرنے کا اعلان کیا گیا تھا جس میں انہوں نے 50 ملین ڈالر کی رقم فراہم کرنے کی یقین دہانی کرائی تھی۔ اس فنڈ کے قیام کا مقصد دماغی صلاحیتوں کو تباہ کرنے والی بیماری کے سائنسی علاج کے مختلف طریقوں پر تحقیق اور اس بیماری کی روک تھام کے لیے دیگر اقدامات کرنا تھا۔

بل گیٹس کا کہنا تھا کہ انہوں نے زھائمر میں مبتلا ایک خاندان کے افراد کو قریب سے دیکھا اور ان کا ذاتی مشاہدہ کیا جس کے بعد انہوں نے فیصلہ کیا کہ وہ اس موذی مرض سے نجات کیلیے حتی الوسع فنڈز فراہم کریں گے۔بین الاقوامی الزھائمر آرگنائزیشن کے مطابق اس بیماری سے ہرسال پوری دنیا میں پانچ کروڑ افراد متاثر ہوتے ہیں۔ 2050ء تک یہ تعداد 13 کروڑ دس لاکھ سے متجاوز ہونے کا اندیشہ ہے۔الزھائمر کے علاج کے حوالے سے بل گیٹس اور لیونارڈ لوڈر کے بعد کئی دوسرے ارب پتی بالخصوص ڈولبی فیملی ، شارل فاؤنڈیشن اور ھیلین شواب کی شمولیت کے بھی امکانات ہیں۔اس فنڈ سے عالمی سطح پر زھائمر کے علاج کے لیے تحقیقات کرنے والے سائنسدانوں،ڈاکٹروں، فلاحی اداروں اوراس سلسلے میںٹیکنالوجی کے شعبے میں کام کرنے والے اداروں اور افراد کی مدد کی جائے گی۔

image_pdfimage_print

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے