Voice of Asia News

چھوٹے بچوں میں بھوک بڑھانے کے لئے زبردست ٹپس

لاہور(خصوصی رپورٹ وائس آف ایشیا,میمونہ عزیز)بچوں کی گروتھ 4 سے 7 سا ل کی عمر میں بہت تیزی کے ساتھ ہوتی ہے۔خاص کر وہ بچے جو سکول جاتے ہیں ان کو دن بھر کی ایکٹیویٹیز کے لئے ایسی غذاؤں کی ضرورت ہوتی ہے جو چاہے کم مقدار میں کھائی جائیں لیکن بچوں کو مکمل غذائیت فراہم کریں۔ عموماً بچے اس عمر میں کھانے پینے سے بھاگتے ہیں اور صحیح اور گھر کی صحت بخش خوراک کی بجائے فاسٹ فوڈز اور دوسری غیر مناسب خوراک کی طرف زیادہ توجہ دیتے ہیں ، لیکن یہ سب جنک فوڈز بچوں کی گروتھ اور ان کی ذہنی نشوونما پر بہت برا اثر ڈالتے ہیں۔بچوں کو ہفتے میں ایک دفعہ باہر کا کھانا کھلانے میں کوئی حرج نہیں ہے، لیکن ان کو زیادہ تر گھر کا تاز ہ کھانا کھلائیں تا کہ بچوں کی صحت سمیت ان کے ذہن کی نشوونما کا عمل متاثر نہ ہو ۔ ایسے بچے جو گھر کا کھانا کھانے سے بھاگتے ہیں ان کی بھوک بڑھانے کے لئے ایک زبردست ٹپس درج ذیل ہے جس کی مدد سے بچوں اور بڑوں میں بھوک کی کمی یا ان کا گھر کے کھانے سے بھاگنے والی عادت ختم ہو جائے گی اور وہ شوق اور بھوک کے ساتھ کھانا کھائیں گے۔
چھوٹے بچوں میں بھوک بڑھانے کے لئے زبردست ٹپس
  بچوں کی خوراک میں کریلے میں کریلے کا استعمال زیادہ سے زیادہ کریں ۔ کریلے کے اندر ایسے اجزاء پائے جاتے ہیں جو معدے کو طاقت فراہم کرتے ہیں اور خوراک کو آسانی کے ساتھ ہضم کرنے میں مدد کرتا ہے۔ جس سے بچوں کی بھوک میں اضافہ ہو گا۔
  بچوں کو روزانہ پودینے کا رس کا آدھا چائے کا چمچ ایک گلاس پانی میں شامل کر کے روزانہ کسی بھی وقت پلائیں۔ اس سے بھی بچوں کی بھوک میں اضافہ ہو گا اور بچے شوق سے گھرکاصحت بخش کھانا کھائیں گے۔
  الفلفا جڑی بوٹی پنسار کی دکان سے عام مل جاتی ہے اس کا رس نکال لیں یا ہومیوپیتھی کی دکان سے الفلفاکا سیرپ مل جائے گا،اس کاروزانہ ایک چوتھائی چائے کا چمچ ایک گلاس پانی میں شامل کریں اور ناشتے سے آدھا گھنٹہ پہلے اس کا استعمال کریں ۔
  چاٹی کی تازہ لسی کے ایک گلاس کے اندرایک چٹکی نمک اور تھوڑا ساپسا ہوا زیرہ شامل کریں اور بچوں کو استعمال کروائیں ۔ لسی اوزیرے کا استعمال بھی بچوں کی بھوک میں اضافے کا باعث بنتا ہے اور بچے ہرطرح کی غذا بڑے شوق سے کھاتے ہیں۔
  پسی ہوئی اجوائن کا ایک چوتھائی چائے کا چمچ ایک گلاس نیم گرم پانی میں شامل کریں اور ہفتے میں تین سے چار دفعہ بچوں کو پلائیں۔ اس کے استعمال سے آپ کے بچوں میں بھوک نہ لگنے یا کم خوارک کھانے کا مسئلہ بالکل ختم ہو جائے گا اور بچے اپنی جسمانی نشوونما کے لئے بھرپور اور پیٹ بھر کر خوراک کھائیں گے۔
  بچوں کو کھانا کھلانے کے بعد ایک یا آدھا انارکھلائیں ۔ انار کے استعمال سے بھوک میں اضافہ ہوتا ہے اور بچے خوشی کے ساتھ باہر کی بجائے گھرکا کھانا کھانے کو ترجیح دیتے ہیں ۔
  ایک بریڈ لیں اور اسے درمیان سے کا ٹ لیں اب ا س پر انگلی سے ایک چٹکی ہلدی چھڑک دیں اور بچوں کو میٹھا پسند ہے اس لئے اگر ساتھ شہد لگا دیں تو سونے پر سہاگہ ورنہ چینی کا استعمال کریں ۔ روزانہ ایک ہفتہ تک بچوں کو ناشتے میں اس طرح ٹوسٹ بنا کر کھلائیں ۔ اس کے استعمال سے بھی بچوں میں بھوک میں اضافہ ہوگا۔
  روزانہ دو سے تین کیلوں کو چمچ کی مدد سے پیس کر بچوں کو کھلائیں اور اگر بچے دودھ پیتے ہیں تو دودھ پلانے سے آدھا گھنٹہ پہلے کیلے کھلائیں اور پھر دودھ پلائیں۔ اس سے بھی بچوں میں بھوک کی کمی دور ہو جائے گی اور ان کی خوراک میں بھی بہتر ی آئے گی۔
یہ ٹپس بچوں اور بڑوں دونوں کے لئے فائدہ مند ہیں ۔جیسے ہی محسوس ہو کہ بچوں کی بھوک میں اضافہ ہو گیا ہے ان کا استعمال کم کردیں یا ایک دو دن کے وقفے سے استعما ل کریں۔بھوک کو بڑھانے کے لئے ماحول بہت اہم کردار ادا کرتا ہے۔ جب بھی کھانا کھائیں تو بچوں کو ساتھ بٹھائیں ایک زبردست سا پیار بھرا ماحول بنائیں تا کہ بچے پرسکون ہو کر پیٹ بھر کو کھانا کھائیں۔ کھانے کے میز کو بہت خوبصورت انداز میں سیٹ کیا جائے اور اگر ممکن ہو تو ساتھ ہلکا سا میوزک لگا لیا جائے۔ کھانے کے دورا ن یا کھانے کے بعدوہیں بیٹھے ہوئے سگریٹ مت پئیں کیونکہ سگریٹ کا دھواں خوراک کے ذائقہ کو خراب کرتا ہے اور بھوک کو کم کرتا ہے۔

image_pdfimage_print

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے