Voice of Asia News

مقبوضہ کشمیر‘بھارتی فورسز کی ریاستی دہشتگردی بدستور جاری‘مزید 4کشمیری شہید

سرینگر(وائس آف ایشیا)مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فورسز نے ریاستی دہشتگردی کا مظاہرہ کرتے ہوئے مزید 4 کشمیریوں کو شہید کردیا ہے ‘گزشتہ 2روز میں بھارتی جارحیت کے نتیجے شہید ہونیوالے کشمیریوں کی تعداد 6 ہوگئی ہے۔کشمیر میڈیا سروس کے مطابق ضلع بارہ مولا میں بھارتی فوج راشٹریا رائفلز اور کمانڈوز نے مشترکہ آپریشن کیا‘بھارتی فورسز نے رفیع آباد کے علاقے میں محاصرے اور سرچ آپریشن کے دوران نوجوانوں کو شہید کیا۔ضلع پلوامہ کے علاقے گدورہ میں لوگوں نے تلاشی اور محاصرے کی کارروائی کیخلاف زبردست احتجاجی مظاہرے کیے‘درندہ صفت بھارتی فورسز نے مظاہرین کو منتشر کرنے کیلئے طاقت کا وحشیانہ استعمال کیا ‘جس کے بعد علاقے میں جھڑپیں شروع ہو گئیں۔اس ضمن میں چیئرمین کشمیر لبریشن فرنٹ یاسین ملک دختران ملت نے اپنی سربراہ آسیہ اندرابی کی مندولی جیل سے تہاڑ جیل خفیہ منتقلی پر بھی شدید احتجاج کیا ہے‘آسیہ اندرابی کے رشتہ دار جب ملاقات کے لیے نئی دلی کی منڈولی جیل پہنچے تو جیل انتظامیہ کی طرف سے انہیں بتایا گیا کہ آسیہ اندرابی کو اپنی دونوں ساتھیوں کے ہمراہ تہاڑ جیل منتقل کر دیا گیا ہے جس پر اہلخانہ حیران رہ گئے۔دوسری جانب مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فورسز کی حالیہ ریاستی دہشتگردی کیخلاف کشمیر حریریت رہنماوں کی جانب سے شدید الفاظ میں مذمت کی گئی‘کشمیر حریریت رہنماوں کی جانب سے جاری کردہ مشترکہ بیان میں کہا گیا کہ بھارت آئے روز وادی میں ظلم و ستم کی داستانیں رقم کر رہا ہے ‘بھارت طاقت کے زور پر کشمیریوں کی حمایت حاصل نہیں کر سکتا اور نہ کشمیریوں کے حق خودارادیت کو ختم کر سکتا ہے ۔بیان میں کہا گیا کہ کشمیری عوام کی قربانیاں رائیگاں نہیں جائیں گی ہم ایک دن ضرور اپنے مقدس مقصد میں کامیاب ہو جائیں گے ۔کشمیر حریریت رہنماوں کی جانب سے جاری کردہ بیان میں کہا گیا کہ درندہ صفت بھارتی فورسز کی ریاستی دہشتگردی کیخلاف عالمی برادری اور انسانی حقوق کی تمام تنظمیں خاموش تماشائی ہیں‘جو کہ ایک بہت بڑا سوالیہ نشان ہے ۔

image_pdfimage_print

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے