Voice of Asia News

غزہ میں اسرائیلی فوج کی فائرنگ سے زخمی فلسطینی جام شہادت نوش کرگیا

غزہ(وائس آف ایشیا )فلسطین کے علاقے غزہ کی پٹی میں 14 مئی کو ہونے والے ایک مظاہرے کے دوران اسرائیلی فوج کی فائرنگ سے زخمی فلسطینی کئی ہفتے موت وحیات کی کشمکش میں رہنے کے بعد دم توڑ گیا۔ فلسطینی میڈیا کے مطابق 29 سالہ وسام یوسف حجازی شہید کا تعلق غزہ کے جنوبی شہر خان یونس کے بنی سھیلا قصبے سے ہے۔ وہ 14 مئی کو مشرقی عبسان میں ایک ریلی میں شریک تھا۔ اس دوران اسرائیلی فوج نے ریلی پر فائرنگ کی جس کے نتیجے میں وہ شدید زخمی ہوگیا تھا۔حجازی کو سرمیں گولی لگنے سے زخمی ہونے کے بعد اسپتال منتقل کیا گیا۔ وہاں سے علاج کے لیے مصر اور ترکی لے جانے کی کوشش کی گئی مگر مصری حکام نے اسے ترکی لے جانے کی اجازت نہ دی جس کے بعد زخمی کو دوبارہ غزہ منتقل کردیا گیا۔ رفح گذرگاہ پر پہنچنے کے بعد اس کی حالت مزید بگڑ گئی جس کے نتیجے میں اس کی موت واقع ہوگئی۔خیال رہے کہ 30 مارچ 2018 کے بعد سے اب تک اسرائیلی فوج کی ریاستی دہشت گردی کے نتیجے میں 178 فلسطینی شہید اور 18 ہزار زخمی ہوگئے۔ آٹھ فلسطینی شہدا کے جسد خاکی صہیونی فوج کی تحویل میں ہیں۔

image_pdfimage_print

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے