Voice of Asia News

پاناما جے آئی ٹی میں ایجنسی والوں کو تڑکا لگانے کیلئے رکھا ہوگا، چیف جسٹس

 اسلام آباد(وائس آف ایشیا)چیف جسٹس پاکستان میاں ثاقب نثار نے کہا ہے کہ پاناما جے آئی ٹی میں ایجنسی والوں کو صرف تڑکا لگانے کیلیے رکھا ہوگا۔سپریم کورٹ میں جعلی اکاؤنٹس کیس کی سماعت ہوئی جس کے دوران چیف جسٹس نے کہا کہ اس کیس میں بھی جے آئی ٹی تشکیل دینے کا جائزہ لے رہے ہیں۔ اس موقع پر چیف جسٹس نے کہا کہ پاناما جے آئی ٹی کے نام ہمیں بھی لکھوا دیں۔

ڈی جی ایف آئی اے بشیر میمن نے بتایا کہ  ایف آئی اے کے واجد ضیاء جے آئی ٹی کے سربراہ تھے، ان کے ساتھ عرفان منگی نیب جبکہ بلال رسول ایس ای سی پی سے تھے، آئی ایس آئی اور ایم آئی کے ارکان بھی ٹیم میں شامل تھے۔ چیف جسٹس نے کہا کہ آئی ایس آئی اور ایم آئی کے لوگوں کو چھوڑیں، ایجنسی والوں کو صرف تڑکا لگانے کے لیے رکھا ہوگا۔

6 اگست کو بھی جعلی اکاؤنٹس کیس کی سماعت میں چیف جسٹس نے کہا تھا کہ اس مقدمے میں بھی نواز شریف والی جے آئی ٹی بنا دیتے ہیں، وہی جے آئی ٹی بنے گی تو بیلنس ہو جائے گا، آصف علی زرداری کے وکیل کہتے ہیں کہ تحقیقات ہی نہ کریں، لیکن مجھے زندگی موت کی کوئی پروا نہیں، چیف ہاتھ ڈال رہا ہے تو کسی سے ڈرتا نہیں، چوری کا پیسہ ہضم نہیں کرنے دیں گے

image_pdfimage_print

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے