Voice of Asia News

اسرائیلی عقوبت خانوں میں اسیر فلسطینی مریضوں سے غیر انسانی سلوک،رپورٹ

رام اللہ (وائس آف ایشیا )فلسطین کی انسانی حقوق کی سرکاری کی طرف سے جاری کردہ ایک رپورٹ میں اسرائیل پر مریض قیدیوں کے حقوق کو پامال کرنے کا الزام عا ئد کیا ہے۔ فلسطینی میڈیا کے مطابق فلسطینی محکمہ امور اسیران کی طرف سے جاری کردہ ایک رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ صہیونی حکام زیرحراست فلسطینی مریضوں کے ساتھ منظم انداز میں غیرانسانی سلوک کا مظاہرہ کررہے ہیں۔ دوران حراست انہیں غیرانسانی اور نا مناسب ماحول میں رکھنے کے ساتھ ساتھ ان کے علاج معالجے اور طبی سہولیات کے معاملے میں دانستہ لا پراہی برتی جا رہی ہے۔رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ اسرائیلی زندانون 17 فلسطینی امراض کا شکار ہیں۔ انہیں الرملہ ہسپتال منتقل کیا گیا۔ یہ اسپتال فلسطینی مریض اسیران کو رکھنے کے لیے مختص کیا گیا ہے۔رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ نام نہاد ہسپتال میں بھی فلسطینی قیدیوں کو کسی قسم کی طبی سہولت نہیں دی جا رہی ہے۔رپورٹ میں اسیر ایاد حریبات کی تشویشناک طبی حالت پر گہری تشویش اور خدشات کا اظہار کیا گیا ہے اور کہا گیا ہے کہ سنہ حریبات 2014 سے کئی موذی امراض کا شکار ہے اور اسے مسلسل وہیل چیئر پررکھا گیا ہے۔ وہ خود سے اپنے سہارکھڑے ہونے کی سکت بھی نہیں رکھتا۔رپورٹ کے مطابق عوفر جیل میں قید 52 سالہ اسیر جمال حمامرہ امراض قلب، معدے اور شریانوں کی بیماری کے شکار ہیں۔ 28 سالہ اسیر نضال ابو عیاش نفسیاتی اور ذہنی امراض کے ساتھ کئی جسمانی عوارض میں مبتلا ہیں۔

image_pdfimage_print

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے