Voice of Asia News

شوگر کے مریض گنج پن کا زیادہ شکارجدید تحقیق

لاہور(وائس آف ایشیا) ماہرین نے جدید تحقیق کی روشنی میں دعویٰ کیا ہے کہ شوگر کے مریض گنج پن کا سب سے زیادہ شکار ہوتے ہیں۔ بین الاقوامی میڈیا کے مطابق فرانسیسی ماہرین نے ذیابطیس اور بالوں کی صحت کے درمیان تعلق جاننے کے لیے ایک تحقیق کی جس میں 60 ہزار افراد کو شامل کیا گیا۔ تحقیق میں ظاہر ہوا کہ گنج پن یا خراب بالوں والے تمام کے تمام افراد ذیابطیس کا شکار تھے اور ان میں سے اکثر کو اس بات کا علم ہی نہیں تھا کہ وہ شوگر کے مریض ہیں۔ماہرین کا کہنا ہے کہ ایک صحت مند انسان کی سر پر 80 ہزار سے ایک لاکھ 20 سے تک بال ہوتے ہیں، اور یہ ہر روز صفر اعشاریہ 4 ملی میٹر یا پھر ایک مہینے میں ایک سینٹی میٹر تک بڑھتے ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ ذیابطیس ایک ایسی بیماری ہے جو انسان کے ہر عضو اور حصے پر اثر انداز ہوتی ہے۔ شوگر کے نتیجے میں ناصرف سر بلکہ جسم کے دیگر حصوں میں موجود بالوں کی نشونما بھی شدید متاثر ہوتی ہے۔ تحقیق میں شامل ماہروں کا کہنا تھا گو کہ یہ ضروری نہیں کہ صرف ذیابطیس کے مریض ہی گنج پن کا شکار ہوں لیکن یہ ضروری ہے کہ اس پریشانی کا شکار افراد اپنے معالج سے ضرور مشورہ کریں۔

image_pdfimage_print

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے