Voice of Asia News

بچوں سے جبری مشقت لینا کسی مہذب معاشرے کو زیب نہیں دیتا

اوکاڑہ کینٹ(وائس آف ایشیا) مس شازیہ اقبال ڈویثرنل ایجوکیشنل آفیسر لیٹریسی نے کہا ہے کہ بچوں سے جبری مشقت لینا کسی مہذب معاشرے کو زیب نہیں دیتامعاشی بدحالی سہولیات سے محرومی استحصال بے روزگاری اور غربت و دیگر مسائل کا بہانہ بنا کر بچوں کو زیور تعلیم سے دور رکھ کر جبری مشقت لی جا رہی ہے جو کہ اب نا قابل برداشت ہے کیونکہ حکومت پنجاب نے لٹریسی ڈیپارٹمنٹ کو با اختیار بنا کر ایسے تمام کاموں کا قلع قمع کرنے کا حتمی فیصلہ کر لیا ہے ان تمام بچوں کو مفت تعلیم اور زیور تعلیم سے آراستہ کرنے کے لیے حکمت عملی بنا لی ہے ان خیالات کا اظہارانہوں نے علاقہ بھر کے مختلف سکولوں کا اچانک دورہ کرتے ہوئے کیا اس کے علاوہ بھٹہ خشت پر بنائے گئے سکولز کا بھی دورہ کیا اور وہاں موجود طلبہ ،اساتذہ اور بھٹہ خشت مالکان سے بھی ملاقات کی اس موقع پر انہوں نے اساتذہ و بھٹہ خشت مالکان کو لیٹریسی ڈیپارٹمنٹ کے کاموں کا تفصیل سے آگاہ کیا اور اس پراجیکٹ کو مزید بہتر و فعال بنانے پر زور دیا انہوں نے مختلف سکولز کے دورہ کے موقع پر وہاں موجود افراد سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ کتنے افسوس کی بات ہے کہ ہم بچوں کے ہاتھ میں قلم کتاب کی بجائے کام کرنے کے اوزار دیکھنے کے باوجود معیوب نہیں سمجھتے انہوں نے کہا کہ اس عمل کے تدراک کے لیے ہم سب کو مل کر کام کرنا ہوگا کیونکہ یہ بچے ہمارا سرمایہ ہیں اور ہم ان کی صلاحیتوں کو ضائع نہیں ہوتے دیکھ سکتے ۔

image_pdfimage_print

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے