Voice of Asia News

سرینگر، قتل عام ،جبرو زیادتیوں اور گرفتاریوں کے واقعات کیخلاف احتجاجی مظاہرے

سرینگر(وائس آف ایشیا) مشترکہ مزاحمتی قیادت کی اپیل پر وادی کے طول و عرض میں قتل عام ،جبرو زیادتیوں اور گرفتاریوں کے واقعات کیخلاف احتجاجی مظاہرے کئے گئے۔ لوگوں نے بھارتی فورسز کے ظلم و جبر اور قتل و غارت کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا کہ اگر ان واقعات کو فوری طور پر نہیں روکا گیا تو اس کے خلاف ایک شدید ردعمل سامنے آئے گا جس کی تگمام تر ذمہ داری بھارت کے ارباب اقتدار پر عائد ہو گی۔ احتجاج میں شامل قائدین اور لوگوں نے عالمی انسانی حقوق اور انسان دوست تنظیموں سے بھی اپیل کی کہ وہ ان انسانیت سوز اور وحشیانہ کارروائیوں کے خلاف اپنی آواز بلند کر کے مظلوم قوم کے تئیں اپنی ذمہ داریاں نبھائیں ۔ بیان میں کہا گیا کہ حریت کانفرنس گروپ کے قائدین اور کارکنان جن میں محمد یوسف نقاش ، مولوی بشیر احمد عرفانی ، محمد رفیق اویسی اور دیگر سمیت عوام کی ایک بڑی تعداد نے حیدر پورہ میں جموں و کشمیر میں ہو رہے قتل عام ، ظلم و جبر اور گرفتاریوں کے خلاف احتجاجی جلوس نکالا ۔ اس موقع پر قائدین نے خطاب کرتے ہوئے جموں و کشمیر کی موجودہ صورت حال کو انتہائی گھمبیر اور تشویشناک قرار دیا اور کہا کہ بھارتی فورسز نے ریاست کے اطراف و اکناف میں سرکاری دہشتگردی کا بازار گرم کر رکھا ہے اور وہ یہاں منصوبہ بند طریقے پر ہمارے نوجوان بچوں کو اپنی بربریت اور درندگی کا نشانہ بنا رہے ہیں ۔ قائدین نے ریاستی عوام کے خلاف قابض حکام کی جانب سے چھیڑی گئی جنگ کو تشویشناک قرار دیتے ہوئے کہا کہ دنیا میں کسی بھی جگہ معصوم عوام کے خلاف پیلٹ اور دیگر مہلک ہتھیار استعمال نہیں کئے جاتے ہیں ۔ جس طرح جموں و کشمیر کی ریاست میں کیا جا رہا ہے ۔

image_pdfimage_print

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے