Breaking News
Voice of Asia News

ایران میں مہنگائی کے خلاف آواز بلند کرنے پر5 خواتین کو قید کی سزائیں

لندن (وائس آف ایشیا)ایران کی ایک مقامی انقلاب عدالت نے مہنگائی کے خلاف احتجاج کرنے والی5خواتین کو قید کی سزا سنائی ہے۔ ایران میں انسانی حقوق کے لیے کام کرنے والے ایک گروپ کے مطابق عدالت نے 19سالہ صباکرد افشاری، 23سالہ یاسمین آریانی، نیلوفر ھمافر، مجدہ رجبی اور آذر حیدری کو 2 اگست کو مہنگائی کے خلاف نکالی گئی ایک ریلی میں شرکت کرنے کی پاداش میں قید کی سزا سنائی ہے۔سزا پانے والی پانچوں طالبات کو تہران کی کرجک جیل سے بد نام زمانہ عقوبت خانے "ایفین” منتقل کردیا گیا ہے۔ بعض خواتین کو چھ اور بعض کو ایک سال تک قید کی سزا کا سامنا ہے۔رپورٹ کے مطابق مجدہ رجبی اور نیلو فرھما فر کو چھ چھ ماہ جب کہ یاسمین آریانی، آذر حیدری اور صبا کرد افشاری کو ایک ایک سال قید کی سزا سنائی گئی ہے۔یہ پانچوں طالبات تہران میں ایک تھیٹر کی عمارت کے سامنے مہنگائی کے خلاف ہونے والے ایک مظاہرے میں شریک ہوئی تھیں۔ اس مظاہرے میں مظاہرین نے مہنگائی پر ذرائع ابلاغ کی خاموشی اور اصلاح پسند صحافتی حلقوں کی طرف سے سکوت اختیار کرنیکی پالیسی کو بھی شدید تنقید کا نشانہ بنایا گیا تھا۔

image_pdfimage_print
شیئرکریں
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •