Voice of Asia News

وادی میں شہری ہلاکتوں کیخلاف انجینئر رشید کا احتجاج،سیاہ جھنڈوں کے ساتھ ریلی

ہندوارہ(وائس آف ایشیا )عوامی اتحاد پارٹی نے کولگام ہلاکتوں کے خلاف احتجاجی مارچ نکالا ۔ انجینئر رشید کی قیادت میں مارچ میں شامل لوگوں نے سیاہ جھنڈوں کے علاوہ مختلف احتجاجی نعروں والے پلے کارڈ اٹھارکھے تھے ۔ہندوارہ کے مرکزی چوک میں ساتھیوں سمیت گرفتاری سے قبل انجینئر رشید نے مظاہرین سے خطاب کیا اور کولگام واقعہ کی شدید الفاظ میں مذمت کی۔انہوں نے کہایہ سیاسی پارٹیوں کی ناکامی ہے کہ نئی دلی نہ صرف کشمیریوں کا قتل عام کررہی ہے بلکہ اس سے حض بھی اٹھاتی ہے جبکہ سیاسی پارٹیاں المیوں پر شرمناک طریقے سے سیاست کرتے ہوئے سرینگر سے دلی تک اپنا ووٹ بنک مضبوط کرنے کی کوششوں میں ہیں۔انجینئر رشید نے جموں کشمیر پولیس پر اپنی بنیادی ذمہ داریوں کو بھول کر خود اپنے لوگوں پر بدترین تشدد ڈھانے کا الزام لگایا اور کہا کہ ایک نہ ایک دن مقامی پولیس اہلکاروں کو ادراک ہوگا کہ وہ جو کچھ بھی کررہے ہیں وہ مذموم اور شرمناک ہے مگر تب تک کافی دیر ہوچکی ہوگی اور پولیس اور لوگوں کے درمیان نہ مٹنے والے فاصلے پیدا ہوگئے ہونگے۔انہوں نے کہا کہ مقامی پولیس اہلکاروں کو اپنا جارحانہ طریقہ بدل کر سمجھنا ہوگا کہ مسئلہ کشمیر کو کشمیریوں کو بندوق کی نوک پر خاموش کرکے نہیں بلکہ انہیں حق خود ارادیت دئے جانے سے ہی حل کیا جاسکتا ہے۔دریں اثنا عوامی اتحاد پارٹی نے بھدرواہ، کشتواڑ اور جموں کے کئی مقامات پر بھی کولگام ہلاکتوں کے خلاف احتجاجی مارچ کیا ۔

image_pdfimage_print

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے