Voice of Asia News

آسیہ بی بی کیس قانونی معاملہ ہے، ہر مسئلے میں فوج کو گھسیٹنا افسوسناک ہے: ترجمان پاک فوج

اسلام آباد(وائس آف ایشیا) ترجمان پاک فوج میجر جنرل آصف غفور کا کہنا ہے کہ آسیہ بی بی کا کیس قانونی معاملہ ہے اور ہر مسئلے میں فوج کو گھسیٹنا افسوسناک ہے۔ سرکاری ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل آصف غفور نے کہا کہ آسیہ بی بی کا کیس گزشتہ 10 برس سے عدالتوں میں چل رہا ہے اور یہ قانونی معاملہ ہے، بہتر ہوگا کہ آسیہ مسیح کے معاملے میں قانونی عمل کو مکمل ہونے دیا جائے۔ترجمان پاک فوج نے کہا کہ سپریم کورٹ کے فیصلے کے خلاف مذہبی جماعتوں نے دھرنا دیا،فوج کو ہر معاملے میں گھسیٹنا افسوسناک ہے۔ میجر جنرل آصف غفور کا کہنا تھا کہ تمام مسلمانوں کا حضور پاک ﷺ سے محبت کا رشتہ ہے اور اس رشتے پر کوئی سمجھوتہ نہیں ہوسکتا، اسلام ہمیں امن، درگزر اور محبت کا درس دیتا ہے میجر جنرل آصف غفور کا مزید کہنا تھا کہ پاکستانی بحیثیت مسلمان کیس کو چلنے دیں، بہتر ہوگا آسیہ مسیح کے قانونی عمل کو مکمل ہونے دیا جائے، چاہتے ہیں صورتحال پر امن طریقے سے حل ہو جائے۔افواج پاکستان برداشت کا مظاہرہ کر رہی ہے۔ معاملہ ایسے سٹیج پر نہ لے جائیں جہاں پاک فوج کو آنا پڑے۔ اس موقع پر ترجمان پاک فوج نے کہا کہ وزیراعظم کی جو بھی ہدایت ہو گی فوج اس پر عمل کرے گی۔انہوں نے کہا آئین و قانون کے احترام کیساتھ فوج کیخلاف بیانات سے گریز کرنا چاہیئے، دہشتگردی کیخلاف جنگ جیتنے کے قریب ہیں، ہماری توجہ نہ ہٹائی جائے، اسلام ہمیں امن، درگزر اور پیار کا درس دیتا ہے۔ڈی جی آئی ایس پی آر نے کہا کہ ملک میں امن وامان کی صورتحال برقرار رکھی جائے، ہمیں اسلامی تعلیمات اور قانون کو نہیں چھوڑنا چاہیے۔ ترجمان پاک فوج نے کہا کہ افواج پاکستان پچھلی 2 دہائیوں سے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں مصروف ہے، آئین اور قانون کے احترام کے ساتھ فوج کے خلاف بیانات سے گریز کیا جائے، ہم دہشت گردی کے خلاف جنگ جیتنے کے قریب ہیں اور ہماری توجہ نہ ہٹائی جائے۔ یاد رہے کہ سپریم کورٹ نے 31 اکتوبر کو آسیہ بی بیکی توہین رسالت کے الزام پر سزائے موت کے خلاف اپیل پر فیصلہ سناتے ہوئے اسے رہا کرنے کا حکم دیا جس پر مذہبی جماعتوں کی جانب سے شدید احتجاجکیا جارہا ہے۔ 

image_pdfimage_print

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے