ہندوستان کشمیریوں کا لہو جس بے دریغ انداز سے بہارہا ہے اس کی مثال نہیں ملتی میر واعظ

سری نگر( وائس آف ایشیا) کل جماعتی حریت کانفرنس ع کے چیئرمین میرواعظ محمد عمر فاروق نے کھڈپورہ شوپیاں معرکہ آرائی میں فورسز کے ہاتھوں ایک نہتے شہری شاہد منظور میر ولد منظور احمدمیر ساکن گاگرن اور عسکریت پسند محمد عرفان ولد علی محمد ساکن میمندر شوپیان کو خراج عقیدت ادا کرتے ہوئے کہا ہے کہ فورسز کے ہاتھوں ایک اور معصوم شہری کو لقمہ اجل بنانے کی کارروائی انتہائی قابل مذمت ہے ۔انہوں نے کہا کہ CASO کی آڑ میں فوج اور فورسز کی ہلاکت خیز کارروائیاں اس بات کی عکاس ہیں کہ حکومت ہند اور ان کے ریاستی کارندے کشمیریوں خاصکر نوجوانوں کو چن چن کر نشانہ بنا رہے ہیں اور اس طرح کشمیریوں کو صفحہ ہستی سے مٹانے پر تلے ہوئے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ اس طرح کی کارروائیوں کا مقصد یہاں حق و انصاف پر مبنی حق خودارادیت کی عوامی جدوجہد کو ختم کرنے کی کوشش ہے۔میرواعظ نے زور دیکر کہا کہ قربانیاں ہرگز رائیگاں نہیں جائیں گی اور جس بلند نصب العین کیلئے جان و مال کی بے مثال قربانیاں پیش کی جارہی ہیں وہ مقصد ہر حال میں اور ہر قیمت پر حاصل کیا جائے گا۔ادھرمسلم لیگ نے کھڈپورہ شوپیان میں شہیدعرفان احمد بٹ ساکن پلوامہ اور ایک عام شہری شاہد منظور میر کو خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کہا ہے کہ ہندوستان کشمیریوں کا لہو جس انداز سے بے دریغ بہارہا ہے اس کی مثال آج کے جمہوری دور میں ملنا محال ہے خاصکر اس وقت جب پورے عالم میں انسانی حقوق کے تحفظ اور پاسداری کا ڈھنڈورا پیٹا جارہا ہے اور جمہوریت کے بلند بانگ دعوے کئے جاتے ہیں ۔سالویشن مومنٹ چیئرمین ظفر اکبر بٹ نے شوپیان معرکہ میں جاں بحق ہوئے عام شہری اور عسکری نوجوان کوخراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کہا ہے کہ جس ہمت و پامردی کا مظاہرہ ہمارے نوجوان کررہے ہیں وہ عالمی برادری کے لئے چشم کشا ہے