Voice of Asia News

ڈالر کی قیمت میں 8 روپے اضافہ، ڈالر تاریخ کی بلند ترین سطح پر پہنچ گیا

کراچی (وائس آف ایشیا) انٹر بینک مارکیٹ میں ڈالر کی قیمت تاریخ کی بلند ترین سطح پر پہنچ گئی ہے ۔ ایک ہی دن میں ڈالر کی قیمت میں 8 روپے کا اضافہ کے بعد ڈالر142 روپے کا ہوگیا جس پر معاشی ماہرین نے تشویش کا اظہار کیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق کرنسی مارکیٹ میں ڈالر کی قیمت میں تیزی سے اُتار چڑھاؤ کا سلسلہ جاری ہے۔ جس کے تحت انٹربینک مارکیٹ میں ڈالر ایک دن میں 8 روپے مہنگا ہوا۔جس کے باعث آج انٹر بینک میں ڈالر کی قیمت 142 روپے کی ریکارڈ سطح پر پہنچ گئی۔ گذشتہ روز انٹربینک میں ڈالرکی قدر10پیسے کم ہوئی تھی، جس سے ڈالر کی قیمت خرید 134روپے اور فروخت 134.05روپے پر آ گئی تھی تاہم اوپن مارکیٹ میں ڈالر 135.40روپے پرمستحکم رہا تھا۔ ماہر معاشیات کا کہنا ہے کہ ڈالر کی قیمت میں اس حالیہ اضافے اور روپےکی قدرمیں کمی سے ملک میں مہنگائی کا طوفان آجائے گا۔ڈالر کی قیمت میں اضافے سے درآمدی مصنوعات جس میں کھانے کا تیل، مختلف دالیں، خشک دودھ، پیٹرول، ڈیزل، الیکٹرونکس مصنوعات، موبائل فونز، موٹر سائیکلیں اور گاڑیاں وغیرہ سب کچھ مہنگا ہونے کا واضح امکان پیدا ہو گیا ہے۔ڈالر کی قدر میں اضافے سے افراط زر کی شرح میں بھی اضافہ ہوگا، جبکہ غیر ملکی قرضے اور ادائیگیوں کا حجم بھی بڑھ جائے گا۔یاد رہے 23 نومبر کو اوپن مارکیٹ میں ڈالر کی قیمت 135 روپے پر بلند ترین سطح پر پہنچ گئی تھی۔ واضح رہے کہ پاکستان تحریک انصاف کی حکومت آتے ہی ڈالرکی قدر میں اضافے کا سلسلہ شروع ہوا ، پی ٹی آئی حکومت کے آنے کے بعد سے اب تک ڈالر روپے کے مقابلے 18 روپے مہنگا ہوا۔ معاشی ماہرین کے مطابق موجودہ صورتحال میں دوست ممالک اور آئی ایم ایف سے قرض کا ملنا ڈالر کے مقابلے روپے کی قدر میں کمی کا باعث بن رہا ہے۔

image_pdfimage_print

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے