Breaking News
Voice of Asia News

وزیراعظم چھ ماہ یا تین سال بعد الیکشن کراسکتے ہیں ،شیخ رشید احمد کی وائس آف ایشیا سے گفتگو

الیکشن جلد ہونے سے قیامت نہیں آئیگی، اسٹیبلشمنٹ کے مابین کوئی جنگ نہیں ، فوج حکومت کے ساتھ کھڑی ہے
شہبازشریف این آر او کیلئے مرے جارہے ہیں ،ان کی میڈیکل رپورٹ میں چھت کھلی ہو،
ے سی لگایا جائے،حوالات میں بیڈ اور ناشتہ بہترین دیا جائے ہی آتا ہے ،وزیر ریلوے کی پریس کانفرنس

لاہور(وائس آف ایشیا) وزیر ریلوے شیخ رشید احمد نے کہا ہے کہ شہباز شریف این آر او کیلئے مرے جا رہے ہیں، وزیراعظم چھ ماہ بعد یا تین سال بعد الیکشن کرا سکتے ہیں اس حوالے سے ان کو مکمل اختیار حاصل ہے ،الیکشن جلد ہونے سے قیامت نہیں آجائے گی، حکومت اور اسٹیبلشمنٹ کے مابین کوئی جنگ نہیں ،پاک فوج حکومت کے شانہ بشانہ کھڑی ہے۔وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشید نے لاہور میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہسابق حکومت کی بڑی غلطی تھی وہ اپنے قد سے بڑے کام کررہے تھے،ہر آدمی نے نوازشریف کو سمجھایا کہ اپنے سے بڑا کام نہ کرو،انہوں نے کہا کہ نوازشریف اور مریم کی ڈیل نہیں ہوئی اس لیے انھوں نے خاموشی توڑ دی ، شیخ رشید نے کہاکہ شہبازشریف این آر او کیلئے 90 کے زاویے سے مرے جارہے ہیں،شہبازشریف کی میڈیکل رپورٹ آتی ہے کہ چھت کھلی ہونی چاہیے ،شہبازشریف کیلئے اے سی لگاہونا چاہیے حوالات میں بیڈہواور ناشتہ بہترین دیاجائے۔ ایک سوال کے جواب میں شیخ رشید احمد نے کہاکہ وزیراعظم عمران خان کو الیکشن کرانے کا مکمل اختیار حاصل ہے وہ چھ ماہ بعد یا تین سال بعد الیکشنکراسکتے ہیں اور الیکشن کرانے سے کوئی قیامت نہیں آجائے گی ۔ایک اور سوال پر انہوں نے کہاکہ پاک فوج حکومت کے شانہ بشانہ کھڑی ہے اور ملکی سیاسی و عسکری قیادت ایک پیج پر ہیں ۔انہوں نے کہاکہ اسٹیبلشمنٹ اور حکومت کے درمیان بھی کوئی جنگ نہیں چل رہی وہ بھی حکومت کے ساتھ کھڑی ہے ۔ پاک فوج ملک کی معیشت کو مضبوط دیکھنا چاہتی ہے، عدلیہ آئین کی حکمرانی کے لیے کھڑی ہے، عوام چیف جسٹس کی طرف دیکھتے ہیں۔ان کا کہناتھا کہ 31دسمبر تک ہمارے پاس ٹکٹ کی گنجائش نہیں ہوگی،دو مال گاڑیاں رواں ماہ شروع کررہے ہیں،دونوں مال گاڑیوں پر کنٹینرزلانے لیجانے کی سہولت ہوگی،انہوں نے کہا کہ فریٹ ٹرینوں میں نجی کمپنیاں دلچسپی کااظہار کررہی ہیں وہ آگے آئیں،ایم ایل ٹو اور تھری میں ہماری انجینئرنگ کور نے دلچسپی ظاہر کی ہے،کوشش کریں گے ایل ٹو اور تھری بھی میدان میں لے آئیں،شیخ رشیدنے کہا کہ31دسمبر تک ایم ایل ون کا فیصلہ ہوجائے گا،تمام ریلوے ٹریک تبدیل کریں گے۔وزیر ریلوے شیخ رشیدنے کہا کہ لاہور اورراولپنڈی کے درمیان ایک اور ٹرین چلانے کا منصوبہ ہے،ساتوں ڈویژن کیلئے آئی ٹی کا ایک چھوٹاگروپ تشکیل دیں گے۔ مسافروں کو اسٹیشنز پر ہر قسم کی سہولیتں ملے گی، ہر ڈویژن میں آئی ٹی بورڈ بنا رہے ہیں، ریلوے اسٹیشنز پر فارمیسی شاپس کھول رہے ہیں اور ہم ریلوے میں سرمایہ کاری کا خیر مقدم کریں گے۔ انہوں نے کہا70 سال سے بیکار پڑی بوگیوں کو بھی فروخت کر رہے ہیں، رحمان بابا ایکسریس کا کرایہ 1350 روپے ہیں،2 مال گاڑیوں کا اس ماہ افتتاح کر رہے ہیں۔شیخ رشید کا کہنا تھا کہ عوام نے ہم پر اعتماد کیا اور ہم انقلاب لے کر آئیں گے، لاہور اور راولپنڈی کے درمیان ایک اور ٹرین چلانے کا منصوبہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ مسافر ٹرینون کی چھت پر بیٹھ کر سفر نہ کریں، تمام ریلوے ٹریک تبدیل کریں گے، ریلوے کیلئے خود انحصاری کی پالیسی کو اپنایا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اللہ نے ہماری مدد کی، پچھلے ہفتے آمدن 26 کروڑ 12 لاکھ تھی، اس ہفتے آمدن 45 کروڑ ہے، ساڑھے 6 لاکھ لیٹر تیل بچایا ہے۔ 31 دسمبر تک لاہور کراچی میں تمام ٹکٹیں ختم ہو چکی ہیں۔ قبل از وقت ٹکٹوں کی فروخت عوام کا اعتماد ہے۔انہوں نے کہا کہ 24 تاریخ کو سپریم کورٹ میں ریلوے سے متعلق سماعت ہے۔ ایک ہزار پٹرول پمپس کی جگہیں لیز پر دینا چاہتے ہیں۔ 70 ہزار ویگنوں کا اسٹاک موجود ہے۔ دھند کے باعث موٹر وے پر لوڈ زیادہ ہوا تو ریلوے مدد کے لیے بھرپور تیار ہوگی۔شیخ رشید کا کہنا تھا کہ جمعے اور ہفتے کو لوگ ٹرینوں کی چھتوں پر آرہے ہیں، میں نے سختی سے منع کیا۔شیخ رشید کا کہنا تھا کہ لاہور اور راولپنڈی کے درمیان ایک اور ٹرین چلانے کا منصوبہ ہے۔ کراچی پشاور کا کرایہ بس کے راولپنڈی لاہور کے کرائے کے برابر ہے۔ ہم سے پہلے منصوبہ بندی نہیں صرف خریداری ہی کی گئی، 8 ارب پر سگنل چھوڑ کر آئے تھے 32 ارب پر آگئے ہیں۔انہوں نے کہا کہ ریلوے کا تمام عملہ بہت محنت کر رہا ہے اور میں چاہتا ہوں کہ وزیر اعظم عملے کا ایک گریڈ بڑھا دیں۔ ڈھائی لاکھ پودے اور 24 نئی نرسریاں لگائی ہیں۔ 25 دسمبر کو کارکردگی میں ریلوے نمبر ون ہوگا۔وفاقی وزیر نے کہا کہ پچھلی حکومتوں میں 55 انجنوں کی حالت زیادہ ٹھیک نہیں۔ 68، 69 انجنوں کی حالت ٹھیک نہیں۔ اپنے محصولات سے ریلوے چلا رہے ہیں۔ایک اورسوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ اعظم سواتی نے چھوٹے مسئلے پر استعفیٰ دیا ان کو سراہنا چا ہیے ۔

image_pdfimage_print
شیئرکریں
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •