Voice of Asia News

باکسنگ جرات مند اور بہادر لوگوں کا کھیل ہے ،محمد علی

لاہور(وائس آف ایشیا)پاکستانی نژاد برطانیہ کے پہلے ڈائبیٹک پروفیشنل باکسر محمد علی نے کہا ہے کہ باکسنگ جرات مند اور بہادر لوگوں کا کھیل ہے ،باکسنگ کے بین الاقوامی مقابلوں میں کامیابی حاصل کرنے کیلئے بلند حوصلہ ،سخت محنت کے ساتھ کی جانے والی ٹریننگ ،ذہنی وجسمانی مضبوطی ،اور رنگ کے اندر فائٹ کے دوران حاضر دماغی کی ضرورت ہوتی ہے،پاکستان کے نوجوان باکسرز میں یہ تمام خوبیاں موجود ہیں لیکن حکومتی سرپرستی ،میڈیا کی بھر پور توجہ اور ملٹی نیشنل کمپنیوں کی جانب سے اسپانسرز شپ کے حصول میں ناکامی کے سبب بے پناہ صلاحیتوں کے حامل پاکستانی باکسرز عالمی سظح پر منعقد ہونے والے مقابلوں میں میڈلز سے محروم رہتے ہیں۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ برطانیہ کے انٹرنیشنل باکسر محمد علی نے کہا کہ اگر سپورٹس مین وزیر اعظم عمران خان کرکٹ کی طرح باکسنگ کے کھیل میں بھی پاکستان کا پرچم بلند دیکھنا چاہتے ہیں تو پھر انہیں باکسنگ کے کھیل سے کرپشن ،میرٹ کاقتل عام ، اقربا پروری اورپسند ناپسند کا خاتمہ کرکے میرٹ پر باکسنگ فیڈریشن کے الیکشن کروا کر پاکستان کے بڑے شہروں میں باکسنگ جمنازیمز بنائیں اور نوجوان باکسرز کو عالمی معیار کی جدید سہولیات فراہم کرکے ماضی کے نامور باکسرز کی زیر نگرانی گروم کیا جائے تو پاکستان ایشین گیمزاور اولمپکس گیمز میں گولڈ میڈلز حاصل کرکے باکسنگ کے کھیل کا ورلڈ چمپئن بن سکتا ہے ۔برطانوی باکسر محمد علی نے کہا کہ ذیابیطس کے مرض میں مبتلا افراد زندگی سے ہرگزمایوس نہ ہوں کیونکہ شوگر کے مریض اپنی خوراک کنٹرول کر کے باکسنگ سمیت دیگر کھیلوں میں کامیاب ہوسکتے ہیں ،انہوں نے بتایا کہ مجھے چار سال کی عمر میں مجھے ٹائپ ون ذیابیطس مرض لاحق ہونے کی تصدیق ہوئی تھی تو میں بارہ سال کی عمر سے پیشہ ور باکسر بن کر ذیابیطس کی بیماری کو شکست دینے کی جدوجہد میں مصروف ہوں۔

image_pdfimage_print

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے