Voice of Asia News

پاکستان نے ایف اے ٹی ایف کی ہدایت پر ترسیلات زر کیلئے بلاک چین ٹیکنالوجی متعارف کروا دی

لاہور (وائس آف ایشیا)پاکستان نے فنانشل ایکشن ٹاسک فورس(ایف اے ٹی ایف)کی ہدایت پر پاکستان میں پہلی مرتبہ بینکنگ سیکٹر میں ملائشیا میں کام کرنیوالوں کی ترسیلات زر کیلئے بلاک چین ٹیکنالوجی متعارف کروا دی ہے جس کا مقصد ملک میں دہشتگردی کے مقاصد کیلئے مالی امداد اور منی لانڈرنگ کا خاتمہ کرنا ہے،اس ٹیکنالوجی سے نہ صرف مالی ٹرانزیکشنز کی فوری بلکہ محفوظ رسائی ممکن ہو گی حتی کہ اس ٹیکنالوجی کے ذریعے ترسیلات زر وصول اور بھجوانے والے کے تمام دستاویزی اقدامات کا پتہ لگایا جا سکے گا نیز اس ٹیکنالوجی کے ذریعے بین الاقوامی سطح پر غیر قانونی حوالہ اور ہنڈی کے غیر قانونی اقدامات کے خلاف سخت کارروائی کی جا سکے گی۔سٹیٹ بینک آف پاکستان کے ترجمان عابد قمر کے مطابق بلاک چین ٹیکنالوجی کے ذریعے بین الاقوامی مالی ٹرانزیکشنز کی بٹکوئن اور کرپٹو کرنسی کے ذریعے ہرگز مالی ٹرانزیکشنز نہیں کی جائیں گی کیونکہ ان پر پاکستان میں مکمل پابندی عائد ہے۔انہوں نے بتایا کہ مرکزی بینک نے اس ٹیکنالوجی کے استعمال کی اجازت دی ہے جس کو کئی طریقے سے استعمال کیا جا سکتا ہے۔ٹیلی نار مائیکرو فنانس بینک نے اپنے جاری ایک بیان میں کہا ہے کہ بینک نے ملائشیا کے تعاون کے اشتراک سے پاکستان میں پہلی کراس بارڈر ترسیلات زر سروس کی بنیاد پربلاک چین متعارف کروائی ہے اور یہ ٹیکنالوجی آن لائن پیمنٹ پلیٹ فارم چلانے والے اینٹ فنانشل سروسز گروپ الیپے نے تیار کی ہے،قبل ازیں چینی الیپے نے مائیکرو فنانس بینک کی45فیصد سٹیک ایکوائر کئے ہیں جن کی مالیت 184.5ملین روپے بنتی ہے،مائیکرو فنانس بینک نے دو ماہ قبل اس ٹیکنالوجی کیلئے مرکزی بینک سے منظوری حاصل کی تھی۔

image_pdfimage_print

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے