Voice of Asia News

کشمیری حریت پسندوں کو جیلوں میں جس طرح انتقام گیری کا نشانہ بنایا جارہا ہے ،

سری نگر(وائس آف ایشیا)انجمن شرعی شیعیان سربراہ آغا سید حسن نے ریاست اور بیرون ریاست جیلوں میں قید کشمیری حریت پسندوں کے تحریکی عزم و استقلال کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے ان کے ساتھ کئے جارہے ناروا سلوک اور ان کی قید کو طول دینے کے نت نئے حربوں کی پرزور الفاظ میں مذمت کی ہے۔مرکزی امام باڑہ بڈگام میں اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے آغا حسن نے کہا کہ گرفتاریاں کسی بھی تحریک آزادی کا ایک لازمی جز ہوتا ہے، تاہم کشمیری حریت پسندوں کو جیلوں میں جس طرح انتقام گیری کا نشانہ بنایا جارہا ہے ،وہ سراسر انسانیت سوزی اور بین الاقوامی قوانین کے منافی ہے۔ آغا حسن نے کہا کہ حریت قائدین اور سرکردہ کارکنوں کو فرضی الزامات کے تحت سلاخوں کے پیچھے دھکیل کر حریت پسند قیادت کے حوصلوں کو توڑنے کی ناکام سعی کی جارہی ہے۔ آغا حسن نے کہا کہ قربانیوں اور گرفتاریوں سے کشمیری حریت پسند قوم کو اپنی برحق مطالبہ آزادی سے دستبردار نہیں کیا جاسکتا۔ انہوں نے کہا کہ طاقت اور تشدد مسئلہ کشمیر کا حل نہیں بلکہ افہام و تفہیم وہ واحد راستہ ہے جو اس دیرینہ سیاسی تنازعے کا حل فراہم کرسکتی ہے۔

image_pdfimage_print

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے