Voice of Asia News

نواز اور زرداری نے کاغذی کمپنیاں بنا کر منی لانڈرنگ کی، فواد چوہدری کا نیا دعویٰ

جہلم (وائس آف ایشیا)وفاقی وزیراطلاعات ونشریات فوادچوہدری نے ایک نیا دعویٰ کیا ہے کہ نوازشریف اور آصف زرداری نے کاغذی کمپنیاں بناکر منی لانڈرنگ کی، ان کی سات نسلوں میں کسی نے کام نہیں کیا، اگر کچھ ’’لے دے‘‘ کر ہی معاملہ ختم کرنا تھا تو پھر ہم نے وزیراعظم ہی کیوں بنانا تھا؟ عمران خان واحد آدمی ہیں جس نے واضح کیا کہ کوئی سودے بازی نہیں ہوگی،کبھی طبیعت توکبھی کہتے ہیں جیل میں ہیٹرخراب ہوگیا، نرم وملائم بستر پر سونے والوں سے آج حساب مانگا جارہا ہے تو چیخیں ساتویں آسمان تک جار ہی ہیں،احتساب منطقی انجام کو پہنچ رہا ہے ۔جہلم میں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے فواد چوہدری نے کہا کہ عوام نے عمران خان کی قیادت میں ایک مافیا کو شکست دی، عمران خان کی قیادت میں پاکستان میں جو تبدیلی آئی ہے۔ فواد چوہدری نے ایک بار پھر الزام عائد کیا کہ نوازشریف اور آصف زرداری نے کاغذی کمپنیاں بناکر منی لانڈرنگ کی، ان کی سات نسلوں میں کسی نے کام نہیں کیا، بیرون ملک جائیدادیں اور کمپنیاں بنائیں، یہاں آکر معصوم صورت بنالیتے ہیں۔وزیراطلاعات کا کہنا تھا کہ یہ کہہ رہے ہیں کہ ہمارا پیسا بچانے کے لیے عوام باہر آئیں، ہر شخص کہتا ہے کہ کچھ لے دے کر معاملہ کریں، اگر کچھ لے دے کر ہی معاملہ ختم کرنا تھا تو پھر ہم نے وزیراعظم ہی کیوں بنانا تھا؟ عمران خان واحد آدمی ہیں جس نے واضح کیا کہ کوئی سودے بازی نہیں ہوگی، اب ان کی چیخیں آسمان تک جارہی ہیں۔فواد چوہدری نے مزید کہا کہ ہمارا وعدہ تھا کہ ملک کو اپنے پاں پر کھڑا کریں گے، ہم نے درآمدات میں 8.88 فیصد کمی کی، 540ملین ڈالر مالی خسارہ کم کیا، پانچ سال میں ہم ایک کروڑ سے بھی زیادہ نوکریاں پیدا کریں گے۔ان کا کہنا تھاکہ زیادہ شور پیسے والے وہ لوگ کررہے ہیں جن پر ہاتھ پڑا ہے، ہم نے کوشش کی ہے کہ غریبوں کیحقوق کا تحفظ کریں، ہماری کوشش ہے کہ انڈسٹری بڑھے،2019 پاکستان کی معاشی تشکیل کا سال ہوگا۔انہوں نے کہاکہ 7 مہینے ہو گئے کرپشن کا کسی وزیر کا اسکینڈل سامنے نہیں آیا، قومی خزانہ بھی پریشان ہے یہ کون سے لوگ آگئے کسی نے لوٹا نہیں۔انہوں نے کہا کہ منگلا ایک خوبصور ت جگہ ہے، سمندر پار پاکستانی کثیر زرمبادلہ پاکستان بھیجتے ہیں، منگلا سمندر پار پاکستانیوں کاگڑھ ہے، عمران خان کی قیادت میں وہ تبدیلی آئی جس کا تصور نہیں کیا جاسکتا تھا۔وزیراطلاعات کا کہنا تھا کہ ان کی 7 نسلوں میں کسی نیکام نہیں کیا، ہل میٹل،العزیزیہ کے نام پر اربوں روپے بیرون ملک لیگئے، حسن اور حسین نواز نے اربوں کی پراپرٹی بیرون ملک بنائی ہوئی ہیں ، حسن اورحسین نواز پاکستان آکر کہتے ہیں ہم تو یہاں کے شہری ہی نہیں، یہ کہتے ہیں نوازشریف سے اظہار یکجہتی کیلئے کوٹ لکھپت جیل پہنچے، کوٹ لکھپت جیل کے باہر15 سے20 لوگ نہیں تھے۔فوادچوہدری نے کہا کہ آصف زرداری اورن لیگ ایک نئی تحریک شروع کرنے جارہے ہیں، کہتے ہیں ہم نے اربوں روپے غیرقانونی کمائے، اب عمران خان واپس لے رہا ہے، عوام سے کہتے ہیں ان پیسوں کو بچانے کیلئے ہمارے لیے باہر نکلیں، روزانہ باہر نکل کر نئی منطق پیش کی جارہی ہے، ہم نے ہر بات پر سمجھوتہ کرنا تھا تو عمران خان کو وزیراعظم بنایا ہی کیوں۔ان کا کہنا تھا کہ معصوم بنے کہتے ہیں پاکستانی نہیں تو باہر پیسہ ملکہ برطانیہ سے رشتہ داری میں بنایا، احتساب اپنے منطقی انجام تک پہنچے گا، اسی لیے ان کی چیخیں آسمان تک جاتی ہیں، کبھی طبیعت توکبھی کہتے ہیں جیل میں ہیٹرخراب ہوگیا، نرم وملائم بستر پر سونے والوں سے آج حساب مانگا جارہا ہے۔وزیراطلاعات نے کہا آج ہمارے پاس اسکول،ٹیچر نہیں،اس کی وجہ کرپشن ہے، کرپشن کی وجہ سے یہ لوگ سارا پیسہ پاکستان سے باہر لے گئے، 7 مہینے ہو گئے کرپشن کا کسی وزیر کا اسکینڈل سامنے نہیں آیا، قومی خزانہ بھی پریشان ہے یہ کون سے لوگ آگئے کسی نے لوٹا نہیں۔فوادچوہدری کا مزید کہنا تھا کہ کشمیرسے لیکربلوچستان تک ہرشخص ہرمسئلے پربات کی، تمام مسائل کوایڈریس کیاجارہاہے،کچھ حل بھی کررہے ہیں، معاشی صورتحال بہترکرنے کیلئے دن رات کام کررہے ہیں، وعدہ کیا تھاپاکستان میں ایک کروڑنوکریاں دیں گے، 5سال میں ایک کروڑسے بھی زیادہ نوکریاں دیں گے، عمران خان نے 50 لاکھ گھر بنانے کا وعدہ کیا وہ بھی پورا کریں گے۔انھوں نے کہا کہ غریب طبقے کے حقوق کا تحفظ کر رہے ہیں، سرمایہ داروں پر بوجھ ڈالیں گے، ہماری کوشش ہے انڈسٹری بڑھے، تمام مسائل کاحل نکال رہے ہیں، اوورسیز پاکستانیوں سے درخواست ہے، لیگل طریقے سے پاکستان رقم بھیجیں، حوالہ ہنڈی کے بجائے بینکنگ چینلز کے ذریعے پاکستان بھیجیں۔وزیراطلاعات کا کہناتھا کہ اوورسیز پاکستانیوں نے پہلے بھی پاکستان کی بہت مدد کی ہے، 2018 پاکستان میں سیاسی تکمیل کا اور 2019 معاشی تکمیل کا سال ہوگا۔

image_pdfimage_print

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے