Voice of Asia News

پاکستان کی پہچان ارفع کریم رندھاوا کو بچھڑے 7 برس بیت گئے

لاہور (وائس آف ایشیا) پاکستان کی پہچان بننے والی کم عمر ترین مائیکروسافٹ سرٹیفائیڈ پروفیشنل ارفع کریم رندھاوا کی پیر کے روز 7ویں برسی منائی گئی ، ارفع کریم کو ملکی و بین الاقوامی سطح پر کئی ایوارڈز سے نوازا گیا۔ دوفروری 1995ء کو فیصل آباد میں پیدا ہونے والی ارفع کریم رندھاوا نے صرف 9 سال کی عمر میں مائیکروسافٹ سرٹیفائیڈ پروفیشنل کی سند حاصل کر کے دنیا بھر میں پاکستانیوں کا سر اونچا کر دیا۔اس کامیابی پر 2005ء میں مائیکرو سافٹ کے بانی بل گیٹس نے ارفع کریم سے خصوصی ملاقات کی اور انہیں مائیکرو سافٹ ہیڈکوارٹر بلا کر سند عطاء کی۔بچپن سے اپنی صلاحیتوں سے سب کو گرویدہ کر دینے والی ارفع کریم نے فاطمہ جناح گولڈ میڈل، سلام پاکستان یوتھ ایوارڈ اور صدارتی پرائیڈ آف پرفارمنس ایوارڈ سمیت کئی اعزازات حاصل کئے۔ اعلیٰ تعلیم حاصل کر کے پاکستان کیلئے کام کرنا عرفہ کا مشن تھا لیکن صرف 13 سال کی عمر میں انہیں ذہنی پیچیدگی کا مرض لاحق ہوا اور اسی میں وہ دل کا دورہ پڑنے سے کومہ میں چلی گئیں۔بل گیٹس کی جانب سے ارفع کریم کو امریکہ لے جا کر علاج کروانے کی پیشکش بھی کی گئی لیکن وہ سفر کے قابل نہ تھیں اور 14جنوری 2012ء کو سی ایم ایچ لاہور میں انتقال کر گئیں۔

image_pdfimage_print
شیئرکریں
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •