Voice of Asia News

چین: ریاست کی رٹ چیلنج کرنے کا الزام ہیومن رائٹس ویب سائٹ کے بانی کو پانچ سال قید کی سزا

 بیجنگ ( وائس آف ایشیا)چین نے ریاست کی رٹ کو چیلج کرنے کے الزام میں اپنے ملک کی نمایاں ہیومن رائٹس ویب سائٹ کے بانی کو پانچ سال قید کی سزا سنا دی۔لی فے یو نے چین میں شہریوں کے حقوق کے حوالے سے ایک ویب سائٹ بنائی تھی جو احتجاج، شہریوں پر ظلم، حکومتی کرپشن اور دیگر حساس معاملات سمیت انسانی حقوق کے مسائل پر آواز اٹھاتی ہے، ان مسائل کو چین میں میڈیا کی پہنچ سے دور رکھا جاتا ہے۔سائی زو ہاؤ انٹرمیڈیٹ پیپلز کورٹ نے صوبے ہوبائی میں فیصلہ سناتے ہوئے ریاست کی رٹ کو چیلنج کرنے کے الزام میں لی فے یو کو پانچ سال قید کی سزا سنائی۔ایمنسٹی انٹرنیشنل میں چینی تحقیق دان پیٹرک پون نیکہا کہ اس سزا سے ایک مرتبہ پھر ثابت ہو گیا کہ چینی حکومت اپنے مخالفین کی آواز کو دبانے کے لیے عدالتی نظام کا غلط استعمال کر رہی ہے۔انہوں نے مزید کہا کہ اس مقدمے میں انتہا سے زیادہ سقم ہے جس میں عالمی معیار سے قطع نظر قانون کو پامال کیا گیا۔لی فے یو کو سزا ایک ایسے موقع پر سنائی گئی ہے جب ایک دن قبل ہی چین میں انسانی حقوق کے سرگرم وکیل وینگ کوان ڑینگ کو اسی جرم میں ساڑھے چار سال قید کی سزا سنائی گئی تھی۔یاد رہے کہ چین کے پہلے سائبر صحافی اور ہیمن وائٹس ویب سائٹ ’64ٹاین وینگ‘ کے بانی ہوانگ کائی کو بھی اسی طرح کے الزامات کا سامنا ہے۔

image_pdfimage_print

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے