Voice of Asia News

اب کوئی بھی کشمیری محفوظ نہیں رہا ہے۔مقبوضہ کشمیر کی مشترکہ آزادی پسند قیادت

سری نگر(وائس آف ایشیا)مقبوضہ کشمیر کی مشترکہ آزادی پسند قیادت ( جے آر ایل ) نے کشمیری نوجوان رضوان احمد پنڈت کی دوران حراست شہادت پر شدید ردعمل کا اظہار کیا ہے ۔ قیادت نے کہا ہے کہ عالمی برادری اگر کشمیریوں کو انصاف دلانے میں ناکام ہوئی تو مظلوم انسانیت کا اس پر سے اعتماد اٹھ جائے گا ۔ مقبوضہ کشمیر کی مشترکہ آزادی پسند قیادت ( جے آر ایل )سید علی شاہ گیلانی ، میرواعظ عمر فاروق اور محمد یاسین ملک کی طرف سے جاری مشترکہ بیان میں کہا گیا ہے کہ اب کوئی بھی فرد بشر محفوظ نہیں رہا ہے۔قائدین نے کہا کہ مزاحمتی قیادت ہو یا سیاسی کارکن، بزرگ دینی شخصیات ہوںیا دینی جماعتیں یا مساجد کے اِمام صاحبان ، عام نوجوانوں ،طلبا غرض ہر ایک مکتبہ فکر سے وابستہ لوگوں کو خوف و دہشت کے عالم میں زندگی گزارنے پر مجبور کیا جارہا ہے اور گرفتاریوں اور ہراسانیوں کا ایک لامتناہی سلسلہ شروع کیا گیا ہے اور پورے کشمیر کو ایک پولیس ا سٹیٹ میں تبدیل کرکے رکھ دیا گیا ہے۔ ایمنسٹی انٹرنیشنل، آئی سی آر سی ،اقوام متحدہ کے انسانی حقوق کمیشن و کونسل اور دوسرے اداروں سے کشمیری اسیروں اور مظلوموں کی دادرسی کیلئے اقدامات اٹھانے کی اپیل کرتے ہوئے مشترکہ مزاحمتی قیادت نے کہا کہ عالمی برادری اگر کشمیریوں کو انصاف دلانے میں ناکام ہوئی تو مظلوم انسانیت کا اس پر سے اعتماد اٹھ جائے گا۔ مشترکہ مزاحمتی قیادت نے رضوان احمد پنڈت کے قتل پرجمعرات21 مارچ کو زندگی کے تمام مکاتب فکر بشمول تاجر برادری، وکلا، سول سوسائٹی اور جملہ شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والے لوگوں سے اس قتل ناحق کیخلاف بھر پور احتجاج کرنے کی اپیل کی ہے جبکہ22 مارچ جمعتہ المبارک کو کشمیر کی تمام چھوٹی بڑی مساجد، آستانوں، خانقاہوں،اور امام باڑوں میں اس قتل ناحق،سرکاری سطح پر خوف و دہشت کا ماحول برپا کرنے کے خلاف احتجاج کیا جائے۔

image_pdfimage_print
شیئرکریں
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •