Voice of Asia News

جموں وکشمیر بین الاقوامی سطح پر تسلیم شدہ متنازعہ خطہ ہے ، سید علی گیلانی

سرینگر( وائس آف ایشیا) کل جماعتی حریت کانفرنس گیلانی گروپ کے چیئرمین سید علی گیلانی نے بھارتی حکمرانوں کو حقائق اور زمینی صورتحال پر غور کرنے کا مشورہ دیتے ہوئے کہا ہے کہ کشمیر ایک سنگین اور سلگتا ہوا مسئلہ ہے اور اس کو غیر حقیقت پسندانہ اور تیز طرار بیان بازیوں سے حل کیا جانا ناممکن ہے اپنے ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ بھاجاپا لیڈر سخت زبان استعمال کرکے بھارت میں اپنے ووٹ بینک کو کسی حد تک مطمئن تو کرسکتے ہیں لیکن کشمیر کے حالات اور کشمیریوں کی سوچ پر اس کا کوئی اثر پڑتا ہے اور نہ اس طرح سے مسئلہ کشمیر کی حیثیت اور ہییت کو تبدیل کیا جانا ممکن ہے انہوں نے بھارت کے وزیر داخلہ کے اس بیان کہ کشمیر بھارت کا اٹوٹ انگ ہے کو ہمالیائی جھوٹ اور تاریخی حقائق کو مسخ کرنے کی لاحاصل کوشش قرار دیتے ہوئے کہا کہ انہیں یہ بات اچھی طرح ذہین نشین ہونی چاہیے کہ جموں کشمیر بھارت کا کوئی حصہ نہیں ہے یہ بین الاقوامی تسلیم شدہ متنازعہ خطہ ہے انہوں نے اس بات پر افسوس کا اظہار کیا کہ کوئی بھی بھاجاپا لیڈر معقول اور حقائق پر مبنی بات کرتا نظر نہیں آتا ہے یہ سب جنگی جنون جیسی باتیں ہیں اور کسی بھی متوازن سوچ کے سیاستدان کو اس طرح کی باتیں زیب نہیں دیتی ہیں بلکہ یہ ان کی اعتباریت پر سوال کھڑا کرتا ہے انہوں نے کہا کہ بھارت کا کوئی بھی حکمران ایسا نہیں گزرا ہے جس نے کشمیر ہمارا ہے کا نعرہ نہ دیا وہ اکہتر سال مکمل ہوگئے لیکن ان بیانات سے آج تک زمینی حقائق میں کوئی تبدیلی واقع نہیں ہوئی ہر گزرتے دن کے ساتھ یہ مسئلہ اور زیادہ سنگین نوعیت اختیار کرتا گیا اور آج کے کشمیر کی جو صورتحال ہے وہ بھارت کے حکمرانوں کے سامنے ہے۔

image_pdfimage_print