Voice of Asia News

بھارت کے عام انتخابات کیلئے 20 ریاستوں میں پولنگ، مقبوضہ کشمیر میں مکمل ہڑتال،ٹرن آؤٹ11فیصد سے کم

نئی دہلی( وائس آف ایشیا) بھارت کی قومی اسمبلی(لوک سبھا) کے انتخابات کے لیے 20 ریاستوں میں انتخابات کے لیے پولنگ، مقبوضہ کشمیر میں بھارتی انتخابات کے خلاف مکمل شٹر ڈاؤن ہڑتال،پولنگ اسٹیشن ویران،ٹرن آؤٹ11فیصد سے کم ریکارڈ۔جمعرات کو بھارت کی لوک سبھا کی کل 543 نشستوں پر ووٹنگ 7 مراحل میں ہونا ہے جس کا باقاعدہ آغاز 20 ریاستوں کی 91 نشستوں پر پولنگ سے ہوا۔پولنگ کا عمل مقامی وقت کے مطابق شام 6 بجے تک رہا جب کہ پولنگ اسٹیشنز پر پولیس اور پیرا ملٹری فورسز کے اہلکار تعینات ہیں۔جن ریاستوں میں پولنگ ہو رہی ہے، ان میں آندھرا پردیش، ارونچل پردیش، آسام، بہار، چتھیس گڑھ، مہاراشٹرا، مقبوضہ جموں کشمیر، مانیپور، میگھالایا، میزورام، ناگالینڈ، اودیشا، سکم، تلنگانا، اترپردیش، اترکھنڈ، مغربی بنگال، آندامن، لکشدویپ اور ترائپورا شامل ہیں۔دوسری جانب مقبوضہ کشمیر میں پولنگ کے خلاف مکمل ہڑتال رہی ،کاروباری مراکز بند اور سڑکوں پر ٹریفک معمول سے کم رہی ۔بھارتی فوج اپنے مقاصد میں ناکام رہی اور لوگوں کو گھروں سے نہیں نکالا جا سکا البتہ بعض مقامات پر لوگوں کو فوجی گاڑیوں میں پولنگ اسٹیشنز تک لایا گیا،بھارت کے تمام تر ہتھکنڈوں کے باجود آخری اطلاعات تک ٹرن آؤٹ 11فیصد سے کم رہا ۔یاد رہے کہ بھارتی انتخابات کے دوسرے مرحلے میں 18 اپریل کو 13 ریاستوں، تیسرے مرحلے میں 23 اپریل کو 14 ریاستوں میں پولنگ ہوگی اور آخری ساتویں مرحلے میں 19 مئی کو 8 ریاستوں میں پولنگ ہوگی جس کے بعد نتائج کا اعلان 23 مئی کو کیا جائیگا۔

image_pdfimage_print