Voice of Asia News

آرمی چیف سے تاجکستان کے وزیر دفاع کی ملاقات

اسلام آباد ( وائس آف ایشیا) آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ سے تاجکستان کے وزیر دفاع جنرل شیر علی مرزو نے ملاقات کی، ملاقات میں علاقائی سیکیورٹی اور باہمی دلچسپی کے امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔تفصیلات کے مطابق پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ آئی ایس پی آر کے مطابق تاجکستان کے وزیر دفاع جنرل شیر علی مرزو نے جی ایچ کیو کا دورہ کیا۔ اس موقع پر آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ سے انہوں نے ملاقات کی۔ملاقات میں علاقائی سیکیورٹی اور باہمی دلچسپی کے امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کا کہنا تھا کہ تاجکستان پاکستان کا دوست ملک ہے، باہمی تعاون سے خطے میں امن و استحکام کو تقویت ملے گی۔تاجک وزیر دفاع کا کہنا تھا کہ خطے میں امن و استحکام کے لیے پاکستان کا کردار قابل قدر ہے۔

وزیر خارجہ سے ملاقات

آرمی چیف سے ملاقات کے بعد تاجکستان کے وزیر دفاع وزارت خارجہ پہنچے۔ وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے تاجک وزیر دفاع کا خیر مقدم کیا۔تاجک وزیر دفاع اور وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کے درمیان ملاقات کے دوران دو طرفہ تعلقات، سیاسی و عسکری تعاون سمیت اہم امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ دو طرفہ تعلقات کو قدر کی نگاہ سے دیکھتے ہیں، وزیر دفاع کے دورے سے تعلقات اور عسکری تعاون مزید مستحکم ہوگا۔تاجک وزیر دفاع نے کہا کہ علاقائی امن کے لیے پاکستان کی کوششوں کو سراہتے ہیں۔ دونوں رہنماؤں کے درمیان تجارتی، اقتصادی، سفارتی اور توانائی کے شعبوں میں تعاون کے فروغ پر اتفاق ہوا۔ملاقات میں دو طرفہ عسکری تعلقات کی موجودہ نوعیت پر اطمینان کا اظہار بھی کیا گیا جبکہ پاکستان کی جانب سے تاجکستان کی سیاسی و عسکری قیادت کے لیے نیک خواہشات کا اظہار کیا گیا۔

image_pdfimage_print
شیئرکریں
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •