Voice of Asia News

امریکا کے بعد یورپی انتخابات میں بھی روسی مداخلت کا انکشاف، روس کی تردید

برسلز( وائس آف ایشیا ) امریکا کے بعد یورپی انتخابات میں بھی روس پر مداخلت کی کوشش کا انکشاف ہوا ہے، روس نے الزامات کی تردید کردی۔تفصیلات کے مطابق روس پر الزام عائد کیا گیا ہے کہ یورپی انتخابات میں مداخلت کے لیے سماجی ویب سائٹس اور رشیا ٹوڈے جیسے دیگر ٹی وی چینلز کا سہارا لیا جا رہا ہے۔غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا ہے کہ روس پر یورپی انتخابات کی مہم میں مداخلت کی کوشش کرنے کا الزام عائد کیا گیا ہے، البتہ روس نے الزامات کی تردید کرتے ہوئے افواہیں قرار دیے ہیں۔امریکی ٹی وی کے مطابق خفیہ اداروں کی ایک رپورٹ میں کہا گیا کہ روس کی جانب سے روس کے لیے نرم گوشہ رکھنے والے اور یورپی یونین کے ناقد سیاستدانوں کو تعاون فراہم کیا جا رہا ہے۔رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ اس کام کے لیے سماجی ویب سائٹس اور رشیا ٹوڈے جیسے دیگر ٹی وی چینلز کا سہارا لیا جا رہا ہے۔اس مقصد کے لیے نوجوان نسل پر نمایاں توجہ دی جا رہی ہے، روس نے ان الزامات کو بے بنیاد قرار دیا ہے، یورپی انتخابات 23 مئی کو ہو رہے ہیں۔یاد رہے کہ نومبر 2016 میں ہونے والے صدارتی انتخاب سے قبل ماہ اکتوبر میں امریکی حکومت نے روس پر ڈیموکریٹک پارٹی پر سائبر حملوں کا الزام عائد کیا تھا۔واضح رہے کہ سابق امریکی صدر باراک اوباما بھی اس عزم کا اظہار کر چکے ہیں کہ امریکی صدارتی انتخابات میں مبینہ مداخلت کرنے پر روس کے خلاف کارروائی کی جائے گی۔

image_pdfimage_print