Voice of Asia News

جعلی اکاؤنٹس کیس : آصف زرداری کیخلاف تحقیقات میں اہم پیش رفت

 
 
راولپنڈی( وائس آف ایشیا ) نیب نے سابق صدرآصف علی زرداری کیخلاف ہریش کمپنی کیس میں ضمنی ریفرنس دائر کرنے اور ملزم نامزد کرنے کا فیصلہ کرلیا، آصف علی زرداری کو نیب تحقیقات میں تعاون نہ کرنے پر ملزم بنایا جارہا ہے۔تفصیلات کے مطابق جعلی اکانٹس کیس میں آصف زرداری کے خلاف تحقیقات میں اہم پیش رفت ہوئی ،ہریش کمپنی کیس میں نیب نے ضمنی ریفرنس دائرکرنے کا فیصلہ کرلیا ہے۔نیب ذرائع کا کہنا ہے نیب نے آصف علی زرداری کو ضمنی ریفرنس میں ملزم نامزد کرنے کا فیصلہ کیاہے، آصف علی زرداری کو نیب تحقیقات میں تعاون نہ کرنے پر ملزم بنایا جارہاہے۔نیب نے جعلی اکانٹس کیس کا پانچواں ریفرنس ہاریش کمپنی عدالت میں دائر کیا تھا ، عبوری ریفرنس میں اومنی گروپ کے عبدالغنی مجید، سیکرٹری سندھ حکومت اعجاز خان مرکزی ملزم نامزد ہیں۔نیب کے مطابق عبدالغنی مجید نے بیٹی مناہل مجید کے نام بینامی پراپرٹی بنائی ڈی ایچ اے میں کرپشن کے پیسوں سے بنایا گیا قیمتی پلاٹ منجمد کردی ہے۔گذشتہ روز سابق صدر آصف زرداری نے 8 ارب روپیکی مشکوک ٹرانزیکشن اور اوپل 225 میں ایک ارب روپے رشوت لینے کے الزام پر نیب کے سامنے پیش ہوکر بیان ریکارڈ کرایا تھا۔بعد ازاں آصف زرداری کی نیب پیشی کی اندرونی کہانی سامنے آئی تھی، پی پی کے شریک چیئرمین نے تحقیقاتی ٹیم کو جواب دیا تھا کہ آج نیب کوآخری مرتبہ دستیاب ہوں، آئندہ پیش نہیں ہوں گا۔آصف زرداری کا کہنا تھا تحقیقاتی ٹیم سے غصے میں کہا کہ اب نیب نہیں ہوگی، یا تو نیب رہے گا یا پھر پاکستان کی معیشت، ہرایک کیپاس بلیک منی اوربزنس اکانٹس ہیں۔نیب کی تحقیقاتی ٹیم نے جعلی اکانٹس سے متعلق آصف زرداری سے سوال کیا تھا تو انہوں نے مشکوک اکانٹس اور ٹرانزیکشنز کو برنس اکانٹ کہا، تحقیقاتی ٹیم کے سوال دہرانے پر آصف زداری غصے میں آگئے تھے۔

image_pdfimage_print