Voice of Asia News

انسانی حقوق کی تنظیمیں کشمیر میں شہریوں کا قتل عام رکوائے، حریت کانفرنس

 
سری نگر(وائس آف ایشیا) کل جماعتی حریت کانفرنس نے دنیا کے انسانی حقوق کی تنظیموں بشمول اقوام متحدہ ، انسانی حقوق کمیشن، ایمنسٹی انٹرنیشنل ، ایشیا واج، بین الاقوامی ریڈ کراس اور دنیا و بھارت کی دیگر تمام انسانی حقوق کی تنظیموں اور گروپس سے اپیل کی ہے کہ وہ کشمیر میں شہریوں کا قتل عام رکوائیں۔انسانی حقو ق کی پامالیوں بارے جے کے سی سی ایس اور اے پی ڈی پی کی رپورٹ عالمی برادری کیلئے چشم کشا ہے ، عالمی برداری رپورٹ کا سنجیدگی سے نوٹس لیتے ہوئے حقو ق انسانی کی پامالیاں بند کرائے کیلئے کردار ادا کرے ۔ کے پی آئی کے مطابق ترجمان کل جماعتی حریت کانفرنس ع نے سرینگر میں جاری ایک بیان میں کہاکہ 560 صفات پر مشتمل رپورٹ جس میں 1990سے کشمیری عوام پر بھارتی فورسز کی طرف سے ظلم و تشدد کے واقعات کو سامنے لایاگیا ہے کی اقوام متحدہ کے سابقہ خصوصی نمائندے جان ای مینڈز کی طرف سے بھی تصدیق کی گئی ہے۔انہوں نے کہاکہ رپورٹ میں کشمیریوں پر ظلم و تشدد کے واقعات، طریقہ کار، اس میں ملوث اہلکاروں، مقامات اور دیگر تفصیلات بھی شامل ہیں۔رپورٹ میں شامل کئے گئے 400سے زائد واقعات میں 24کشمیری خواتین سے متعلق ہیں جن میں سی12کو بھارتی فوجیوں نے بے حرمتی کا نشانہ بنایاگیا۔ رپورٹ میں کہاگیا ہے کہ بھارتی حکومت کشمیریوں پرتشدد کو مقبوضہ کشمیرمیں حالت کو کنٹرول کرنے کیلئے ایک آلہ یاہتھیار کے طورپر استعمال کر رہی ہے۔ فورم کے ترجما ن نے رپورٹ میں منظر عام پر لائی گئی انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کوعالمی برداری کیلئے چشم کشا قراردیتے کہاکہ مقبوضہ علاقے میں رائج کالے قوانین جن کے تحت بھارتی فوجیوں کو نہتے کشمیریوں کے قتل عام اور ان پر ظلم و تشد دکی کھلی چھوٹ حاصل ہے جموں وکشمیر میں انسانی حقوق کی پامالیوں کی بڑی وجہ ہے کیونکہ آج تک کشمیر میں انسانی حقو ق کی پامالیوں میں ملوث کسی بھی بھارتی فورسز کے اہلکار کے خلاف کوئی کارروائی عمل میں نہیں لائی گئی۔
وائس آف ایشیا23مئی2019 خبر نمبر16

image_pdfimage_print
شیئرکریں
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •