Voice of Asia News

شمالی کشمیر کے سوپور قصبے میں ریاستی دہشت گردی 2 کشمیری نوجوان شہید

 
 
سری نگر( وائس آف ایشیا) شمالی کشمیر کے سوپور قصبے میں بھارتی فوج نیریاستی دہشت گردی کی تازہ کارروائی میں2 کشمیری نوجوانوں کو شہید کر دیا ہے جبکہ جنوبی کشمیر کے شوپیان ضلع میں گزشتہ روز شہید ہونے والے دو نوجوانوں سیار احمد بٹ اور شاکر احمد وگے کو سپردخاک کر دیا گیا ہے ۔ شدید بارش کے باوجود ہزاروں شہریوں نے نماز جنازہ میں شرکت کی۔ بھارت مخالف اور آزادی کے حق میں نعرے لگائے۔جنوبی اور شمالی کشمیر میں24 گھنٹوں کے دوران مجموعی طور پر4 کشمیری نوجوانون کو شہید کیا گیا ۔تفصیلات کے مطابق شمالی کشمیر کے بارہ مولا ضلع میں واڈورہ پائین بومئی سوپور میں بھارتی فوج نے محا صرے اور تلاشی کارروائی میں بدھ کے روز ایک نوجوان کو شہید کردیا منگل کی شام کو بھی اسی علاقے میں ایک نوجوان بھارتی فائرنگ سے شہید ہوا۔ نو جوانوں کی شہادت کے بعد احتجاجی مظاہرے شروع ہو گئے ہیں، حکام نے موبائل فون اور انٹر نٹ سروس معطل کر دی ہے ۔ منگل کے روزشوپیان کے آونیرہ گاؤں میں بھارتی فوج نے دو گھر تباہ کر دیے تھے جبکہ سیار احمد بٹ ولد ثناء اﷲ ساکن مانچھواہ کولگام اور شاکر احمد وگے ساکن آونیرہ شوپیان کو شہید کر دیا تھا۔ پولیس کے مطابق ان نوجوانوں کا تعلق انصار غزو الہند تنظیم سے تھا۔۔ دونوں نوجوانوں کو ان کے آبائی علاقوں میں شدید بارش کے باوجود سپرد خاک کیا گیا۔ ہزاروں شہریوں نے نماز جنازہ میں شرکت کی بھارت مخالف اور آزادی کے حق میں نعرے لگائے۔ ضلع بھر میں موبائل انٹرنیٹ سروس ہے۔شوپیان اور یاری پورہ کولگام میں شہدا کی یاد میں ہڑتال سے معمولات زندگی متاثر ہوئے جبکہ سڑکوں سے ٹریفک کی نقل و حرکت بھی مسدود ہوکے رہ گئی۔ نوجوانوں کی مختلف ٹولیوں نے سڑکوں پر آکر فورسز کے خلاف سخت احتجاج کیا اور اسلام و آزادی کے حق میں زور دار نعرے لگائے۔عینی شاہدین کا کہنا تھا کہ مطاہرین نے اس موقعے پر فورسز پر سنگ باری کی جس کے بعد یہاں کچھ وقفے تک صورتحال ابتر ہوئی تاہم فورسز اہلکاروں نے آنسو گیس کے گولے داغے۔ آونیرہ شوپیان اور یاری پورہ کولگام میں ہڑتال رہی۔

image_pdfimage_print
شیئرکریں
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •