Voice of Asia News

دوست کی تصویر بلا اجازت سوشل میڈیا پر جاری کرنیوالے کو 31 ہزار درہم جرمانہ

 
ابوظہبی( وائس آف ایشیا )ابوظہبی کی عدالت نے نوجوان کو بلا اجازت اپنے دوست کی تصویر شیئر کرنے پر 10 ہزار درہم جرمانے اور 21 ہزار درہم ہرجانہ ادا کرنے کا حکم دیدیا۔ متحدہ عرب امارات کے اخبار کے مطابق ابوظہبی پبلک پراسیکیوشن نے نوجوان پر فرد جرم عائد کی تھی کہ اس نے اپنے دوست سے اجازت لیے بغیر اس کی نجی تصویر سوشل میڈیا پر جاری کرکے ملکی قانون کی خلاف ورزی کی ہے۔ متحدہ عرب امارات نے 2012ء میں انفارمیشن ٹیکنالوجی جرائم کے انسداد کا قانون جاری کیا تھا جس کے تحت بغیر اجازت کسی کی نجی تصویر سوشل میڈیا پر شیئر کرنے کو قابل سزا جرم قرار دیا گیا۔ اس قانون کے تحت ابوظہبی کی پرائمری کورٹ نے عرب شہری کو مبینہ جرم کا مرتکب قرار دے کر اس پر 10 ہزار درہم کا جرمانہ عائد کیا تھا اور حق تلفی پر مدعی کو 21 ہزار درہم معاوضے کی شکل میں ادا کرنے کا حکم دیا تھا۔ عدالت نے مدعا علیہ کو مقدمے کے جملہ اخراجات بھی ادا کرنے کا حکم بھی دیا ہے۔ ابوظہبی کی اعلیٰ عدالت نے ملزم کی اپیل مسترد کرتے ہوئے لوئر کورٹ کا فیصلہ برقرار رکھا ہے۔
وائس آف ایشیا04جولائی 2019 خبر نمبر43

image_pdfimage_print
شیئرکریں
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •