Voice of Asia News

انٹربینک مارکیٹ میں ڈالر کی قیمت میں 63 پیسے کا اضافہ

کراچی ( وائس آف ایشیا ) انٹربینک مارکیٹ میں ڈالر کی قیمت میں ایک مرتبہ پھر اضافہ ہو گیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق انٹربینک مارکیٹ میںڈالر کی قیمت میں 63 پیسے کا اضافہ ہوا جس کے بعد ڈالر 158 روپے کا ہو گیا۔ خیال رہے کہ آئی ایم ایف سے 99 کروڑ ڈالر کی قسط ملنے کے باوجود ڈالرکی قدر میں کمی نہیں آ سکی۔ انٹربینک میں ڈالر 63 پیسے اضافے سے 158 روپے پر ٹریڈ کرتا رہا جبکہ گذشتہ روز انٹربینک میں ڈالر 157 روپے 37 پیسے پر بند ہوا تھا۔تجزیہ کاروں کے مطابق آئی ایم ایف پاکستان کو آئی ایم ایف کی جانب سے 99 کروڑ ڈالرملنے پر جہاں زرمبادلہ ذخائر میں بہتری آئے گی وہاں ڈالر کی قدر میں استحکام بھی متوقع ہے تاہم ڈالر کی قیمت میں حالیہ اضافہ کی وجہ ادائیگیوں میں توازن میں خسارہ ہو سکتا ہے۔یاد رہے کہ آئی ایم ایف نے پاکستان میں ڈالر کی قیمت میں مزید اضافہ نہ ہونے کا عندیہ دیا تھا لیکن اس کے باوجود ڈالر کی قیمت میں مسلسل اضافہ جاری ہے۔اس حوالے سے آئی ایم ایف مشن چیف ارنسٹو رمیزو ریگو کا کہنا تھا کہ پاکستان میں ڈالر کا ایکسچینج ریٹ حقیقت کے قریب تر ہے، پاکستان نے معاشی اصلاحات پر توجہ دی ہے، قرض پروگرام سے واضح ہو چکا کہ پاکستان معاشی نظم و ضبط قائم کرے گا۔آئی ایم ایف نے اعلان کیا تھا کہ پاکستان میں اس وقت ڈالر کی موجودہ قیمت حقیقت کے قریب تر ہے۔ اس حوالے سے خود آئی ایم ایف مشن چیف کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ پاکستان میں ڈالر کا ایکسچینج ریٹ حقیقت کے قریب تر ہے۔آئی ایم ایف کے ایگزیکٹو بورڈ کا اجلاس تین جولائی کو امریکی دارالحکومت واشنگٹن میں ہوا جس میں پاکستان کے لیے 6 ارب ڈالرز کے قرض کی منظوری دی گئی تھی، آئی ایم ایف کا یہ قرض پروگرام 39 ماہ پر مشتمل ہوگا ۔

image_pdfimage_print
شیئرکریں
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •