Voice of Asia News

کشمیر سے متعلق اقوام متحدہ کی حالیہ رپورٹ ہمارے موقف کی توثیق ہے، حریت فورم

سرینگر ( وائس آف ایشیا)مقبوضہ کشمیر میں میرواعظ عمرفاروق کی سرپرستی میں قائم حریت فورم نے کہا ہے کہ مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی پامالیوں کے بارے میں اقوام متحدہ کے ہائی کمشنر برائے انسانی حقوق کے دفتر کی طرف سے جاری کردہ حالیہ رپورٹ ہمارے موقف کی توثیق ہے۔ کشمیرمیڈیا سروس کے مطابق اقوام متحدہ کے ہائی کمشنر برائے انسانی حقوق کے دفترنے کشمیر میں انسانی حقوق کی پامالیوں کے بارے میں 13ماہ میں اپنی دوسری رپورٹ میں کہا ہے کہ کشمیرمیں سرکاری مشینری کے ہاتھوں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں اور شہریوں کے قتل میں مسلسل اضافہ دیکھا گیا ہے۔حریت فورم نے سرینگر میں جاری ایک بیان میں کہاکہ کشمیر کے حوالے سے جاری کردہ دوسری تفصیلی رپورٹ میں انسانی حقوق کی سنگین پامالیوں میں اضافے اور قابض فورسز کو دی جانے والی کھلی چھوٹ کے بارے میں شواہد اہمیت کے حامل ہیں۔رپورٹ میں ایک بار پھر وادی کشمیر میں انسانی حقوق کی سنگین پامالیوں کا ذکر کیا گیا ہے اورماضی میں ہونے والی خلاف ورزیوں کے ازالے ، اس وقت جاری پامالیوں کی روک تھام اور کشمیریوں کو انصاف فراہم کرنے کی ضرورت پر زور دیا گیا ہے۔فورم نے بھارت اور پاکستان پر زوردیا ہے کہ وہ ایک دوسرے کیساتھ اور کشمیری عوام سے بات چیت کریں اور اقوام متحدہ کی طرف سے تسلیم شدہ تنازعہ کشمیر کو حل کرانے کے لیے آگے بڑھیں اور خطے میں قتل و غارت اور انسانی حقوق کی پامالیوں کا خاتمہ کریں۔

image_pdfimage_print
شیئرکریں
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •