Voice of Asia News

حریت کانفرنس کی طرف سے 13جولائی1931کے شہداء کو خراج عقیدت

 
سرینگر( وائس آف ایشیا)مقبوضہ کشمیرمیں کل جماعتی حریت کانفرنس نے13جولائی 1931 کے شہداء کو شاندار الفاظ میں خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے اس دن کو کشمیری شہداء کے مشن کی تکمیل کیلئے تجدید عہد کے دن کے طورپر منانے کا اعلان کیا ہے۔ کشمیرمیڈیاسروس کے مطابق کل جماعتی حریت کانفرنس کے ترجمان نے سرینگر میں جاری ایک بیان میں کشمیری عوام سے کل (ہفتہ کو ) مشترکہ حریت قیادت کی طرف سے پورے مقبوضہ علاقے میں مکمل ہڑتال کی اپیل بھی دہرائی ہے ۔ انہوں نے کہاکہ سیدعلی گیلانی کی ہدایت پر حریت قائدین مزارشہداء نقشبند صاحب جاکر شہداء کو خراج عقیدت پیش کریں گے۔انہوں نے کہاکہ 13 جولائی 1931کوڈوگرہ مہاراجہ ہری سنگھ کے فوجیوں نے سرینگر سینٹرل جیل کے باہر یکے بعد دیگرے 22کشمیریوں کو گولیاں مار کر شہید کردیا تھا۔ اس روز ہزاروں کشمیری عبدالقدیر نامی ایک شخص کے خلاف مقدمے کی سماعت کے موقع پر اس کے ساتھ اظہار یکجہتی کے لیے جیل کے باہر جمع ہوئے تھے ، جس نے کشمیریوں کو ڈوگرہ راج کے خلاف علم بغاوت بلند کرنے کیلئے کہاتھا ۔ہزاروں افراد عبدالقدیر کے ساتھ اظہار یکجہتی کیلئے عدالت کے باہر جمع ہو گئے ۔ اس دوران جیسے ہی نماز ظہر کا وقت ہواتو ایک نوجوان آذان دینے کیلئے اٹھا۔ ڈوگرہ فوجیوں نے موذ ن کو گولی مار کو شہید کر دیا جس کے بعد ایک اور نوجوان نے اٹھ کر آذان جاری رکھی اوراسے بھی فوجیوں نے گولی مارکر شہید کردیا ۔ اس طرح سے آذان مکمل ہونے تک 22 نوجوانوں نے اپنی جانوں کی قربانی دی۔حریت ترجمان نے کہاکہ کشمیر کی تاریخ میں یہ پہلا موقع تھا جب معصوم اور نہتے کشمیری عوام کو اجتماعی طور لہو لہان کیا گیااوریہی وہ عوامی جوش وجذبہ تھا جس نے شخصی راج کی بنیادیں ہلادیں۔ انہوں نے کہاکہ کشمیری بھارت کے غیر قانونی تسلط سے آزادی کیلئے اپنی پر امن جدوجہد آزادی جاری رکھے ہوئے ہیں اور انہوں نے اس سلسلے میں اب تک لاکھوں جانوں کو نذرانہ پیش کیا ہے اور قربانیوں کا یہ سلسلہ آج بھی جاری ہے اور اب تک 6لاکھ سے زائد شہداء 1931ء کے شہداء کے قافلے میں شامل ہوچکے ہیں۔ ادھر متحدہ جہاد کونسل کے سربراہ سید صلاح الدین نے سرینگر سے جاری ایک بیان میں 13جولائی 1931کے شہداء کو خراج عقیدت پیش کیا ہے ۔ انہوں نے کہاکہ کشمیری عوام 1931کے شہداء کی پیروی کرتے ہوئے بھارت کے غیر قانونی تسلط سے آزادی کیلئے اپنی جانوں کا نذرانہ پیش کررہے ہیں۔
وائس آف ایشیا12جولائی 2019 خبر نمبر107

image_pdfimage_print
شیئرکریں
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •