Voice of Asia News

شمالی کشمیر کے سوپور قصبے میں ریاستی دہشت گردی کی کارروائی میں نوجوان کو شہید

سری نگر(وائس آف ایشیا) بھارتی فوج نے شمالی کشمیر کے سوپور قصبے میں ریاستی دہشت گردی کی کارروائی میں ایک نوجوان کو شہید کر دیا ہے ، عدنان چنہ نامی نوجوان کو بدھ کے روز سوپور کے علاقے گنڈ براتھ Gund Brath میں تلاشی اور محاصرے کی کارروائی کے دوران شہید کر دیا گیا ۔بھارتی فوج کی 21 راشٹریہ رائفلز اور سپیشل آپریشن گروپ کے اہلکاروں نے بدھ کی صبح گنڈ براٹھ سوپور کو محاصرے میں لیکر تلاشی کاروائی شروع کی تھی۔علاقہ میں انٹر نیٹ سروس کو معطل کر دیا گیا ہے جبکہ حکام نے تعلیمی اداروں کو بھی دن بھر کیلئے بند کر دیے گئے ہیں۔ نوجوان کی شہادت پر شہریوں نے بھارتی فوج کے خلاف احتجاج کیا بھارتی فوج کے خلاف اور آزادی کے حق میں نعرے لگائے ۔ ادھر بھارتی فوج نے بانڈی پورہ کے کھٹانہ محلہ پیٹھ کوٹ علاقے کو محاصرے میں لے کر بڑے پیمانے پر تلاشی مہم شروع کر دی ہے ،بھارتی فوج کی 23مراتھ رجمنٹ اور ایس او جی بانڈی پورہ نے مشترکہ طورپر گاؤں کو سیل کرکے گاؤں کی طرف جانے والی سبھی راستوں کو کانٹے دار تار سے سیل کیا ہے۔ وائس آف ایشیا کے مطابق شمالی کشمیر میں کٹھ پتلی حکام نے عوام کے احتجاج اور مظاہروں پر پابندی لگا دی ہے ۔ضلع مجسٹریٹ بانڈی پورہ شہباز احمد مرزا کی طرف سے جاری حکم نامے میں کہا گیا ہے کہ دفعہ 144سی آر پی سی کے تحت سڑکوں اور شاہراؤں پر عوام کی طرف سے دھرنا دینے پر مکمل پابندی عائد کی ہے۔بانڈی پورہ ضلع کے حدود میں دو ماہ تک مکمل پابندی عائد کی گئی۔ وائس آف ایشیا کے مطابق بھارتی فورسز نے جماعت اسلامی مقبوضہ جموں وکشمیر کے خلاف دوبارہ شروع کیے گئے کریک ڈاون میں سابق قیم جماعت غلام قادر لون کو گرفتار کر لیا ہے غلام قادر لون کو کرالہ گنڈ پولیس اسٹیشن طلب کر کے گرفتار کر لیا گیا۔ بعد ازاں انہیں پبلک سیفٹی ایکٹ پی ایس اے کے تحت مٹن جیل منتقل کر دیا گیا ۔
وائس آف ایشیا17جولائی 2019 خبر نمبر107

image_pdfimage_print
شیئرکریں
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •