Voice of Asia News

لائن آف کنٹرول پر سیز فائر معاہدے کی بڑھتی ہوئی خلاف ورزیوں کا مؤثر جواب دیا جائے گا

راولپنڈی (وائس آف ایشیا)لائن آف کنٹرول پر بھارتیافواج کی جانب سے سیز فائر معاہدے کی مسلسل خلاف ورزیوں پر پاک فوج کا رد عمل بھی آگیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے ڈی جی میجر جنرل آصف غفور نے مائیکروبلاگنگ ویب سائٹ ٹویٹر پر کہا کہ لائن آف کنٹرول پر سیز فائر کی خلاف ورزیاں بڑھ رہی ہیں۔انہوں نے کہا کہ بھارت کی جانب سے ہر سیز فائر کی خلاف ورزی کا مؤثر جواب دیا جا رہا ہے اور آگے بھی دیا جائے گا۔ ہر قیمت پر شہریوں کا تحفظ یقینی بنایا جائے گا۔ سیز فائر کی خلاف ورزیاں بھارت کی مقبوضہ کشمیر میں ناکامی کا نتیجہ ہیں۔اُن کا مزید کہنا تھا کہ بھارت جان بوجھ کر شہری آبادی کو نشانہ بنا رہا ہے۔خیال رہے کہ اب سے کچھ دیر قبل لائن آف کنٹرول پر بھارت کی جانب سے بلا اشتعال فائرنگ پر بھارتی ڈپٹی ہائی کمشنر کو دفتر خارجہ طلب کیا گیا تھا۔ترجمان دفتر خارجہ کے مطابق ڈپٹی ہائی کمشنر کو دفتر خارجہ طلب کیا گیا۔ ایل او سی پر سیز فائر معاہدے کی خلاف ورزی پر پاکستان نے شدید احتجاج کیا۔ ترجمان کا کہنا ہے کہ بھارتی افواج مسلسل ایل او سی پر شہری آبادی کو نشانہ بنا رہی ہے۔ بھارت دو سال میں 1970 1970 مرتبہ ایل او سی پر سیز فائر معاہدے کی خلاف ورزی کر چکا ہے۔بھارتی فوج نے دنتا، ڈھڈیال، جوڑا اور لیپا سیکٹر پر گذشتہ روز فائرنگ کی۔بھارتی فوج نے شاہ کوٹ، شاردہ سیکٹر پر بھی گذشتہ روز بلا اشتعال فائرنگ کی۔ پاکستان نے بھارت پر زور دیا کہ 2003ء جنگ بندی مفاہمت کا احترام کرے۔بھارت کا شہری آبادی کو نشانہ بنانا عالمی انسانی حقوق کی خلاف ورزی ہے۔خیال رہے کہ گذشتہ روز بھارتی فوج نے ایل اوسی پر اٹھ کے مقام پربلااشتعالفائرنگ کی تھی۔ بھارتی افواج کی جانب سے بلااشتعال فائرنگ کے باعث وادی نیلم کے راستے بند کردیے گئے تھے۔۔شاہراہ کو دھنی کے مقام پر عام ٹریفک کیلئے بند کردیا گیا تھا۔ جس کے بعد بھارتی فوج نے وادی لیپا، دانا، جوڑا، شاردا، دھدنیال سیکٹر کو بھاری توپ خانے اور مارٹرز سے نشانہ بنایا۔ بھارتی گولہ باری کے نتیجے میں دو شہری شہید ہو گئے تھے ۔ پاک فوج نے بھی بھارت کی فائرنگ کا بھرپور جواب دیا تھا ۔

image_pdfimage_print
شیئرکریں
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •