Voice of Asia News

آزاد کشمیر کے صدر سردار مسعود خان نے بھارت کے خلاف سلامتی کونسل جانے کا اعلان کر دیا

مظفر آباد(وائس آف ایشیا ) آزاد کشمیر کے صدر سردار مسعود خان نے مقبوضہ کشمیر کے معاملے پر سلامتی کونسل سے رجوع کرنے کا اعلان کر دیا ہے۔ صدر آزاد کشمیر سردار مسعود خان نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت کو ختم کرنے اور کشمیریوں پر انسانیت سوز مظالم نے جنوبی ایشیا کو جنگ کے دہانے پر لا کھڑا کیا ۔ انہوں نے کہا کہ بھارتی اقدامات کے خلاف جلد اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل سے رجوع کریں گے جس کی ذمہ داری ہے کہ وہ خطے میں جنگ کے منڈلاتے ہوئے خطرات کو ٹالنے اور امن و سلامتی کو یقینی بنانے کے لیے اپنا کردار ادا کرے۔صدر آزاد کشمیر کا کہنا تھا کہ مقبوضہ کشمیر میں جو کچھ ہو رہا ہے وہ بین الاقوامی برادری کی بے حسی کا نتیجہ ہے۔ بین الاقوامی برادری کی اسی بے حسی نے بھارت کو بے گناہ انسانوں پر مظالم ڈھانے کا حوصلہ دیا۔ھارت کی ہندو انتہا پسند حکومت کی جانب سے مقبوضہ جموں و کشمیر میں مسلمانوں کی اکثریت کو اقلیت میں تبدیل کرنے اور مسلمانوں کی نسل کشی نہ صرف جنیوا کنونشن اور دوسرے بین الاقوامی قوانین کی کُھلی خلاف ورزی ہے بلکہ یہ خود اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی کشمیر سے متعلق قرار دادوں سے بھی مکمل انحراف ہے جس کا عالمی برادری کو سخت ترین نوٹس لینا چاہئیے۔خیال رہے کہ بھارت نے مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت کو ختم کیا اور اسے دو حصوں میں تقسیم کرنے کا اعلان کیا تو آزاد کشمیر کی حکومت اور عوام نے بھیبھارت کے اس اقدام کی شدید مذمت کی تھی ۔ اس معاملے پر وزیراعظم آزاد کشمیر راجہ فاروق حیدر نے بھی رد عمل دیتے ہوئے اس معاملے کو سفارتی سطح پر اُٹھانے کا مطالبہ کیا تھا۔ انہوں نے واضح کہا تھا کہ بھارت کشمیریوں کے حقوق سلب کررہا ہے۔ ہم بھارتی آئین کو تسلیم نہیں کرتے۔

image_pdfimage_print
شیئرکریں
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •