Voice of Asia News

دنیا بھر کے مسلم حکمرانوں کو مسئلہ کشمیر پر کردار ادا کرنا ہو گا‘زاہد خان

مظفرآباد/دوحہ قطر(وائس آف ایشیا)قطر میں مقیم معروف کاروباری شخصیت زاہد خان نے کہا ہے کہ دنیا بھر کے مسلم حکمرانوں کو مسئلہ کشمیر پر کردار ادا کرنا ہو گا۔دو ماہ سے زائد 80لاکھ سے زائد کشمیری محصور ہو کر رہ گئے ہیں۔مودی حکومت نے مقبوضہ کشمیرکو اس وقت دنیا کی سب سے بڑی جیل بنا دیا ہے۔قطرسمیت دنیا بھر میں بسنے والے پاکستانی اور کشمیری مقبوضہ کشمیر کے محکوم اور مظلوم کشمیریوں کیلئے اپنا کردار ادا کریں۔انہوں نے کہ اقوام متحدہ مسئلہ کشمیرکومزیدنظراندازنہیں کرسکتا۔مودی کے اقدامات نے کشمیریوں کی زندگی مزیداجیرن کردی ہے۔مقبوضہ کشمیرمیں دوماہ سے زائد لاک ڈاؤن جاری ہے ۔اس وقت کشمیری عوام خاموش احتجاج کررہے ہیں اوربھارتی حکومت مکمل طورپرناکام ہوچکی ہے ۔گزشتہ دنوں وادی کے سکولوں کوکھولنے کااعلان کیاگیاتھاجس کوکشمیریوں نے مستردکرتے ہوئے اپنی جدوجہدآزادی جاری رکھنے کااعلان کیااورکوئی بھی تعلیمی ادارہ نہیں کھل سکا۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے ٹیلی فون پر صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے کہا کہ مودی حکومت اپنے تمام حربوں میں ناکام ہوچکی ہے ۔اس وقت بھی وہ اپنی جدوجہد جاری رکھے ہوئے ہیں اورکشمیرکی آزادی تک اپنی جدوجہدجاری رکھیں گے انہوں نے کہاکہ آزاد کشمیر کو بھارتی فوج کاقبرستان بنائیں گے مقبوضہ کشمیر میں دوماہ سے جاری کوفیوکے نفاذ ،لاک ڈاون کے خلاف عالمی برادری مداخلت کرئے ۔بھارت جیسے دہشت گرد ملک کے خلاف عالمی امن کے دعویداروں کی خاموشی انسانیت کی تذلیل کے مترادف ہے ۔بھارت کے خلاف مسلم امہ بھی خاموش ہے کشمیریوں کی نسل کشی کوروکانہ گیاتو کشمیر میں سلگتی چنگاری پوری دنیاکے امن کوتباہ کرکے رکھ دی گئی ہے ۔جنوبی ایشیاء میں امن حقیقی معنوں میں مسئلہ کشمیر کے حل سے مشروط ہے ۔بھارت جیسے غاصب اورجارح ملک کودنیالگام ڈالے دوماہ سے مقبوضہ کشمیر ایک جیل میں تبدیل ہے ۔جہاں خوارک ادویات کی قلت پیدا ہوچکی ہے ۔ بھارت جنگی جنون میں مبتلا ہے بھارتی ظلم وستم وجبر کشمیریوں کے جذبہ آزادی کوختم نہیں کرسکتا کشمیر ی رہنماوں کی نظر بندیاں ،خواتین کے ساتھ بدسلوکیاں اورچوٹیاں کانٹے کاعمل بھارتی حکومت کی بوکھلاہٹ کاشکار ہے اورجب مظالم کی انتہا کرتے کرتے کشمیریوں کے جذبہ آزادی کو مزید بڑھتے دیکھ کر بھارتی افواج لائن آف کنٹرول پر بسنے والے سول آبادی کوبھی فائرنگ کانشانہ بناتی ہے ۔اقوام عالم اور انسانی حقوق کے لیے اداروں تو بھارتی حکومت کے مقبوضہ کشمیر کے نہتے عوام پر مظالم کافی الفور نوٹس لیاجائے بھارتی سرکار کے انتہا پسندانہ روایے سے جنوبی ایشیا ء کے امن کو شدید خطرات لاحق ہیں بھارت دنیا کا امن تباہ کرناچاہتا ہے ۔موجودہ حالات میں پوری قوم میں اتحاد کی ضرورت ہے۔بھارتی افواج مقبوضہ کشمیر کے اندر رنہتے کشمیریوں پر ہرروز مظالم کی نئی داستانیں رقم کررہی ہیں۔
وائس آف ایشیا9اکتوبر2019 خبر نمبر69

image_pdfimage_print
شیئرکریں
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •